ریاست مدینہ میں پولیس کا خواتین ٹیچر ز کے ساتھ انتہائی شرمناک سلوک ،دل تڑپا دینے والی خبر آگئی

ریاست مدینہ میں پولیس کا خواتین ٹیچر ز کے ساتھ انتہائی شرمناک سلوک ،دل تڑپا ...
ریاست مدینہ میں پولیس کا خواتین ٹیچر ز کے ساتھ انتہائی شرمناک سلوک ،دل تڑپا دینے والی خبر آگئی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)پولیس نے گزشتہ 10ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے پر ڈی چوک میں دھرنا دینے والی خواتین اساتذہ کو بازور طاقت منتشر کردیا او ر اس کارروائی کے دوران 40اساتذہ کو گرفتار بھی کرلیا ۔

ڈی چوک میں اساتذہ نے اپنے مطالبات کے حق میں دھرنا دے رکھا تھا لیکن رات گئے پولیس نے سٹریٹس لائٹس بند کرکے اساتذہ کے خلاف آپریشن شروع کردیا۔ پولیس نے اندھیرے میں اساتذہ کے ساتھ موجود خواتین اور بچوں کو بھی گرفتار کرلیا۔ اندھیرے میں ہونے والے آپریشن کی وجہ سے ہونے والی دھکم پیل میں کئی اساتذہ زخمی ہوگئے۔

پولیس نے تمام مرد اساتذہ کو تھانہ سیکرٹریٹ منتقل کردیا ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ تھانے منتقل کیے جانے والے اساتذہ کی تعداد 40 ہے۔ پولیس نے خواتین اساتذہ اور بچوں کو ویمن پولیس اسٹیشن جی سیون منتقل کیاجہاں انہیں غیر انسانی صورتحال میں رکھا گیا ۔

بعد ازاں اساتذہ نے نیشنل پریس کلب کے سامنے احتجاج کرتے ہوئے اپنے ساتھیوں کو رہا کروانے کا مطالبہ کیا ۔خیال رہے کہ بیسک کمیونٹی ایجوکیشن اساتذہ نے 2 روز سے مطالبات کے حق میں ڈی چوک پر دھرنا دے رکھا تھا۔ مظاہرین کا کہناتھا کہ حکومت نے دس ماہ کی تنخواہ نہیں دی اوروعدہ خلافی بھی کی ہے۔

مزید : اہم خبریں /علاقائی /اسلام آباد