لاہور کے نوجوان بدترین مسائل اور منشیات کا شکار ہیں، ذکر اللہ مجاہد

لاہور کے نوجوان بدترین مسائل اور منشیات کا شکار ہیں، ذکر اللہ مجاہد

  

لاہور(پ ر) امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ لاہور کے نوجوان بدترین مسائل اور منشیات کا شکار ہیں۔ بے روزگاری کی وجہ سے ڈگریاں ہولڈر نوجوان بیروزگار پھر رہے ہیں اور بڑی تعداد میں منشیات اور جرائم کی طرف مائل ہو رہے ہیں۔ نوجوانوں کیلئے کھیل کے میدان سیاستدانوں کے چہتوں اور قبضہ مافیا کی نظر ہوچکے ہیں وہاں پر ناجائز طریقہ سے کاروبار اور مارکیٹس بنا لی گئی ہے۔شہر لاہور کے بدترین مسائل کے حل کیلئے بلدیاتی اداروں کی بحالی ناگزیر ہے۔چند علاقوں کو چھوڑ کر شہر بھر میں ٹوٹیں سٹرکوں، ابلتے گٹر اور گندی کے ڈھیر  شہریوں کیلئے وبال جان بن چکے ہیں۔ لوگ صفاف پینے کے پانی کیلئے سرکاری پانی کیلئے ترس گئے اور بازار سے خرید کر پینے پر مجبور ہیں۔حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے ہیں کہ بلدیاتی حکومتوں کے قیام کیلئے پنجاب میں بلدیاتی الیکشن جلد ازجلد کروائے۔  جب تک بلدیاتی اداروں کا قیام عمل میں نہیں لایا جائے گا اس وقت تک گلی محلے کے مسائل کو حل  نہیں ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے 30 اکتوبر کو مینار پاکستا ن پر ہونے والے یوتھ کنونشن کی تیاریوں کے سلسلے میں   پی پی 160  میں دارالہدی  ٹرسٹ میں یوتھ  ورکر کنونشن سے خطا ب کرتے ہوئے کیا۔ کنونشن میں نائب امیر جماعت اسلامی لاہور ملک شاہد اسلم، امیر جنوبی لاہور خالد احمد بٹ، سیکرٹری سیاسی کمیٹی عامر نثار خان، امیر پی پی حافظ ملک محمود سمیت بڑی تعداد میں نوجوان نے شرکت کی۔ ورکر کنونشن میں پی پی 160 سے ہزاروں نوجوان نے مینارپاکستان یوتھ کنونشن میں شرکت عزم کیا۔

  میاں ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ پاکستان سمیت لاہو ر شہر کے یوتھ بڑی تعداد میں مہنگی تعلیم ہونے کی وجہ سے اعلی تعلیم سے محروم ہے۔  شہر کے نوجوان مشکلات کا شکار جبکہ شہری ادارے اورحکمران اقتدار کے مزے لوٹ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی اقتدار میں آکر نوجوان کیلئے سستی تعلیم اور روزگاری کی فراہمی کو یقینی بنائے گی۔ نوجوانوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ سیاسی لوٹوں، نوسربازسیاستدانوں کے چنگل سے نکلیں اور اس ملک میں امانت و دیانت، صلاحیت اور خدمت کرنے والی جماعت اسلامی کا ساتھ دیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -