باغبانوں کو پھلوں کو کیڑوں مکوڑوں سے بچانے کی ہدایت

 باغبانوں کو پھلوں کو کیڑوں مکوڑوں سے بچانے کی ہدایت

  

فیصل آباد  (اے پی پی):سٹرس ریسرچ انسٹیٹیوٹ ماہرین نے باغبانوں کو فیوٹرل ارلی، مسمی، مالٹے کی برداشت سے قبل ترشاوہ پھل کے کیرے کو خصوصی طور پر کنٹرول کرنے کی ہدایت  کرتے ہوئے کہا ہے کہ چونکہ اکا دکا مقامات پر ترشاوہ باغات میں کچھ ضرر رساں کیڑوں کے حملے کی اطلاعات ہیں لہذاباغبان ان نقصان رساں کیڑوں کی پہچان اور تدارک کیلئے محکمہ زراعت توسیع و پیسٹ وارننگ کے مقامی عملہ کی مشاورت سے کیمیائی کھادوں کا سپرے کریں اور پھل کے کیرے کے تدارک کا سد باب کریں۔

 سٹرس ریسرچ انسٹیٹیوٹ ماہرین کے مطابق ترشاوہ پھلوں میں حیاتین سی اور اے کے علاوہ فولاد، فاسفورس اور چونا بھی کافی مقدار میں پائے جاتے ہیں اور ان کا تازہ رس وٹامن سی کا بہترین ذریعہ ہے جو کہ انسانی جلد کی کئی بیماریوں کیلئے انتہائی مثر ہے۔انہوں نے کہاکہ ہماری فی ایکڑ پیداوار دوسرے ترقی یافتہ ممالک سے کم ہے جس کی اہم وجہ ترشاوہ پھلوں کا کیرا ہے۔انہوں نے بتایاکہ باغبان مسمی، فیوٹرل ارلی اور مالٹا کی برداشت سے پہلے ترشاوہ پھل کے کیرے کو خصوصی طور پر کنٹرول کریں جبکہ ترشاوہ پھلوں کے کیرے کے اسباب کو سمجھ کر مناسب حفاظتی تدابیر اختیار کرنا ازحد ضروری ہے کیونکہ برداشت سے پہلے پھل کا کیرا پیداوار میں کمی کا باعث بنتا ہے۔انہوں نے بتایاکہ سردیوں کی آمد کے ساتھ فضا میں نمی کا تناسب بڑھ جاتا ہے جس سے پھل کو پودے کے ساتھ منسلک کرنے والی ڈنڈی کے درمیان پھپھوندی لگ جاتی ہے اور پھل گر جاتا ہے۔انہوں نے کہاکہ باغبان پھپھوند کے حملہ سے ہونے والے پھل کے کیرے سے تحفظ کیلئے مناسب پھپھوند کش زہر کا سپرے کریں کیونکہ جب پھل پکنے کے قریب ہوتاہے تو پھل کی مکھی بھی کیرے کا سبب بنتی ہے لہذا پھل کی مکھی کے کنٹرول کیلئے ایک ایکڑ میں پانچ تا چھ جنسی پھندوں کے ڈبے لگائے جائیں۔انہوں نے کہاکہ میتھائل یوجینال فیرامون کو روئی کے ساتھ لگا کر ڈبوں کے اندر رکھنا بھی ضروری ہے اسی طرح 10سے15دن کے وقفہ کے بعد ڈبوں میں فیرامون والی دوائی تبدیل کرتے رہناچاہیے۔انہوں نے کہاکہ باغبان پرانی پٹ سن کی بوری کے5سے 6ٹکڑوں پر گڑ کا شیرا وغیرہ لگا کر اس کے اوپر ڈپٹرکس دوائی چھڑک کر انہیں متاثرہ کھیت میں مختلف جگہوں پر رکھیں۔ انہوں نے مزید بتایاکہ اگر بظاہر تندرست پودوں سے کیڑے مکوڑوں اور بیماری کے حملہ سے مبراپھل گرنے لگے تو پھل کے کیرے کو روکنے والا سپرے کرنا بھی ضروری ہے۔ انہوں نے کہاکہ ترشاوہ پھلوں کے کیرے کے تدارک کیلئے برداشت سے پہلے 2-4-ڈی کا سپرے کرنے سے بہتر نتائج حاصل ہوتے ہیں اور فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ ہوتا ہے۔

مزید :

کامرس -