کپاس کے کاشتکار بیج کے حصول کیلئے کھلے ٹینڈوں سے چنائی کریں

کپاس کے کاشتکار بیج کے حصول کیلئے کھلے ٹینڈوں سے چنائی کریں

  

قصور(اے پی پی):محکمہ زراعت  پنجاب نے کپاس کے کاشتکاروں کو ہدایت کی ہے کہ بیج کے حصول کیلئے صحتمند کھلے ٹینڈوں سے چنائی کریں،گلابی سنڈی کے تدارک کیلئے ٹرائی ایز وفاس اور ڈیلٹا میتھرین بحساب 600ملی لٹر فی ایکڑ سپرے کریں اور 7دن کے وقفے سے سپرے دہرائیں۔ ڈپٹی ڈائریکٹرمحکمہ زراعت (توسیع)قصورمحمداکرم طاہرنے کاشتکاروں کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ سپرے کیلئے صاف پانی استعمال کریں۔ سپرے صبح یا شام کے وقت کریں اس کے علاوہ آخری چنائی مکمل ہونے کے بعد گلابی سنڈی کے تدارک کیلئے کھیتوں میں بھیڑ بکریاں چرائیں۔ انہوں نے کہا کہ چھڑیاں کاٹنے یاتلف کرنے سے قبل بچے کھچے ٹینڈوں کو ہاتھ یا مشین سے توڑ کر تلف کردیں،جنٹنگ فیکٹریوں سے کپاس کے کچرے کی تلفی کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ کپاس کی چنائی صبح دس بجے کی سورج کی روشنی میں شروع کریں تاکہ کھلے ہوئے ٹینڈوں پرسے شبنم خشک ہوجائیں اس سے کپاس بدرنگ نہیں ہوتی اور نمی کی وجہ سے جنٹنگ کے دوران مشکلات پیش نہیں آتی۔ انہوں نے بتایا کہ چنائی پودے کے نچلے حصے سے شروع کریں،بیج کیلئے چنائی صرف صحتمند کھلے ٹینڈوں سے کریں، کپاس کی چنائی اور اسے کھیت میں رکھنے کیلئے سوتی کپڑے کا استعمال کریں۔

مزید :

کامرس -