باغ ابن قاسم سے متصل ریسٹورنٹ کی مسماری، شہری اداروں کو 1کروڑ 10لاکھ جرمانہ 

  باغ ابن قاسم سے متصل ریسٹورنٹ کی مسماری، شہری اداروں کو 1کروڑ 10لاکھ ...

  

         کراچی(آئی این پی) سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس سید حسن اظہر رضوی نے باغ ابن قاسم سے متصل پلاٹ کی ملکیت اور ریسٹورنٹ مسمار کرنے کے خلاف ایس بی سی اے اور کے ایم سی دیگر حکام کو درخواست گزار کو ایک کروڑ 10لاکھ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے حکام کو درخواست گزار کو رقم 17سال کے مارک اپ کے ساتھ ادا کرنے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے قرار دیا ہے کہ انہدام کی کارروائی کیلئے طے شدہ ضابطوں پر عمل درآمد نہیں کیا گیا، شہری اداروں نے اختیارات کے ناجائز استعمال اور غیر قانونی کارروائیوں سے کراچی کو تباہ کردیا ہے۔ عدالت نے پلاٹ کی قیمت کی مد میں چھ کروڑ روپے ہرجانے کی استدعا بھی مسترد کردی۔ ہفتے کو سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس فیصل کمال عالم کی سربراہی میں قائم بنچ کی جانب سے باغ ابن قاسم سے متصل پلاٹ کی ملکیت اور ریسٹورنٹ مسمار کرنے کے خلاف درخواست پر فیصلہ سنایا۔ شہری کو ذہنی اذیت دینے پر ایس بی سی اے، کے ایم سی اور دیگر کے خلاف بڑا حکم جاری کردیا گیا۔

باغ ابن قاسم

مزید :

صفحہ آخر -