پاکستانی سفیر سے پہلے ارشد شریف کے کینیا میں قتل کی اطلاع کس نے پاکستان پہنچائی ؟ دعویٰ سامنے آ گیا 

پاکستانی سفیر سے پہلے ارشد شریف کے کینیا میں قتل کی اطلاع کس نے پاکستان ...
پاکستانی سفیر سے پہلے ارشد شریف کے کینیا میں قتل کی اطلاع کس نے پاکستان پہنچائی ؟ دعویٰ سامنے آ گیا 

  

نیروبی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) کینیا میں پاکستانی نژاد رکن پارلیمنٹ نے نامور صحافی ارشد شریف کے قتل کی اطلاعات پاکستان کو دیں ۔

تفصیلات کے مطاق کینیا کے پاکستانی نژاد رکن اسمبلی نے بتایا کہ پاکستانی صحافی کو نیروبی سے 200 کلومیٹر دور ہائی وے پر پولیس کی جانب سے گولیاں مار کر قتل کیا گیا ۔

نجی ٹی وی" جیونیوز" نے ذرائع وزارت خارجہ سے کہاہے کہ مقامی پولیس کا وفد جلد کینیا میں موجود پاکستانی ہائی کمشنر کو بریفنگ دے گا جبکہ پاکستان ہائی کمیشن نے صدارتی محل سے بھی رابطہ کیا اور مکمل تحقیقات کا مطالبہ کیا گیاہے ۔ پاکستانی سفارتخانہ ارشد شریف کی میت پاکستان واپس لانے کیلئے انتظامات کر رہاہے ۔ہائی کمشنر کینیا نے وزارت خارجہ کو ابتدائی تفصیلات بھیج دی ہیں ۔

یاد رہے کہ کینیا کے مقامی میڈیا کی جانب سے دعویٰ کیا جارہاہے کہ صحافی ارشد شریف کا قتل غلط فہمی پر ہوا ہے، وہ موگادی سے نیروبی جارہے تھے کہ راستے میں چیک پوسٹ پر انہیں شناخت کیلئے روکا گیا لیکن ڈرائیور کی جانب سے گاڑی نہیں روکی گئی اور ان کا پیچھا کیا گیا، اس دوران فائرنگ سے صحافی ارشد شریف کے سر میں گولی لگی جس سے وہ دم توڑ گئے۔

مقامی میڈیا میں دعویٰ کیا جارہاہے کہ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ ایک گاڑی میں بچے کو اغواء کیا گیا ہے اور انہیں جس گاڑی کا حلیہ بتایا گیا وہ ارشد شریف کی گاڑی سے ملتا جلتا تھا۔

مزید :

قومی -