عمران خان کے گوشوارے بینک ریکارڈ سے مطابقت نہیں رکھتے، الیکشن کمیشن نے توشہ خانہ کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا

عمران خان کے گوشوارے بینک ریکارڈ سے مطابقت نہیں رکھتے، الیکشن کمیشن نے توشہ ...
عمران خان کے گوشوارے بینک ریکارڈ سے مطابقت نہیں رکھتے، الیکشن کمیشن نے توشہ خانہ کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)الیکشن کمیشن آف پاکستان نے توشہ خانہ ریفرنس کیس کاتفصیلی فیصلہ جاری کر دیا،توشہ خانہ ریفرنس کیس کا تحریری فیصلہ 36 صفحات پر مشتمل ہے ،فیصلے پر چیف الیکشن کمشنر اورچاروں ممبران کے دستخط ہیں ،توشہ خانہ ریفرنس کیس کا فیصلہ متفقہ ہے ۔

نجی ٹی وی ہم نیوز کے مطابق فیصلے میں کہاگیا ہے کہ الیکشن کمیشن کی طرف سے جاری فیصلے میں کہا گیا ہے کہ عمران خان کے مطابق تحائف 2 کروڑ15 لاکھ 64 ہزار میں خریدے،کابینہ ڈویژن کے مطابق تحائف کی مالیت 10کروڑ79 لاکھ 43 ہزار تھی۔

الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ عمران خان کے گوشوارے بینک ریکارڈ سے مطابقت نہیں رکھتے، عمران خان کے بینک اکاﺅنٹ کی تفصیلات سٹیٹ بینک سے منگوائی گئیں۔عمران خان کے بقول تمام تفصیلات ٹیکس گوشواروں میں ظاہر کردہ ہیں۔عمران خان کے اکاﺅنٹ میں موجود رقم تحائف کی مالیت نصف تھی۔فیصلے میں مزید کہناتھا کہ عمران خان نے وضاحت نہیں دی کہ گوشواروں میں غلطی غیرارادی تھی۔

الیکشن کمیشن نے عمران خان کی 6 حلقوں سے کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا، الیکشن کمیشن کا کہنا ہے عمران خان نے تاحال انتخابی اخراجات کی تفصیلات جمع نہیں کرائیں۔

الیکشن کمیشن نے کہاہے کہ 2018 سے19 کے اختتام پر عمران خان کے اکاﺅنٹ میں 5 کروڑ16 لاکھ روپے تھے ،عمران خان گوشواروں میں کیش اور بینک کی تفصیل بتانے کے پابند تھے جو نہیں بتائی۔عمران خان نے تسلیم کیا کہ مالی سال 2019-20 میں تحائف ظاہر کئے نہ فروخت سے حاصل رقم،الیکشن کمیشن اور ایف بی آر الگ الگ ادارے ہیں۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -