قیام امن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا،صوبائی سیکرٹری داخلہ پنجاب

قیام امن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا،صوبائی سیکرٹری داخلہ پنجاب

لاہور (جنرل رپورٹر) بین المذاہب و بین المسالک ہم آہنگی کے فروغ کے لیے تمام مکاتب فکر کے علمائے کرام و آئمہ کرام مکمل طور پر یکسو ہیں۔ محرم الحرام ایثار و قربانی کا مہینہ ہے۔ علمائے کرام منافرت پر مبنی تحریر و تقریر کو کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔ مشترکات کو فروغ دے کر اور فروعی مسائل کو چھوڑ کر ہی اتحاد کے راستے پر چلا جا سکتا ہے۔ ہر منبر سے اتحاد و یکجہتی اور باہمی اخوت کا درس دیا جائے گا۔شرپسند عناصر اور پاکستان کے دشمن ممالک کے کسی مذموم ارادے اور شرارت کو ناکام بنانے کے لیے علمائے کرام کی صفوں میں مکمل اتحاد ہے۔ علمائے کرام اور آئمہ کرام محرم الحرام میں حفاظتی انتظامات اور دیگر کاوشوں میں حکومت پنجاب کے احسن اقدامات کو سراہتے ہیں اور محرم میں قیام امن کے لیے ہر حکومتی اقدام اور انتظامیہ کے ساتھ کھڑے ہیں۔ان خیالات کا اظہار صوبائی سیکرٹری داخلہ پنجاب میجر (ر) اعظم سلیمان کی زیر صدارت لاہور ڈویژن امن کمیٹی کے منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس میں علمائے کرام و آئمہ کرام نے کیا۔ اجلاس میں کمشنر لاہور ڈویژن عبداﷲ خان سنبل ، سیکرٹری پراسیکیوشن پنجاب رانا مقبول، آئی جی پنجاب پولیس مشتاق سکھیرا، سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر) امین وینس، ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف، تمام ڈی سی اوز، تمام ڈی اوز، آر پی اوز شیخوپورہ شہزاد سلطان، خواجہ بشارت حسین کربلائی، آغا شاہ حسین قزلباش، مولانا اکبر، حافظ میاں محمد اصغر، عبدالرزاق علوی، عبدالوہاب روپڑی، علامہ مشتاق جعفری،پیر سید محمد عثمان نوری، قاضی عبدالغفار قادری، ڈاکٹر محب النبی، عبدالحمید رحمانی، ڈاکٹر عبدالغفار سلفی، مولانا عبدالستار، حاجی محمد شفیع، سید راحت حسین و دیگر علمائے کرام و اراکین ضلعی امن کمیٹی نے شرکت کی۔صوبائی سیکرٹری داخلہ پنجاب میجر (ر) اعظم سلیمان نے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کیا کہ قیام امن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہے۔ جن علماء کی زبان بندی اور بعض ضلعوں میں داخلہ پر پابندی لگائی گئی ہے اس کی فہرستوں کا تبادلہ ضرور ہوگا۔ ضلعی امن کمیٹیاں اعتراضات کے حوالے سے کام کر سکتی ہیں لیکن وعدے کی پاسداری نہ کرنے والوں سمیت ضمانتی افراد کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

مزید : صفحہ آخر


loading...