ملتان سمیت مختلف شہروں میں طوفان بادو باراں دیوار گرنے و دیگر حادثات میں 3ہلاکتیں، 17افراد زخمی

ملتان سمیت مختلف شہروں میں طوفان بادو باراں دیوار گرنے و دیگر حادثات میں ...

ملتان،وہاڑی،ٹھٹھہ صادق آباد،میلسی ، ڈاہرانوالا (خبرنگار، وقائع نگار،جنرل رپورٹر،نمائندگان)ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے مختلف شہروں میں تیز آندھی کے ساتھ کہیں ہلکی اور کہیں موسلا دھار بارش سے گرمی کا زور ٹوٹ گیا دیوار میں گرنے وار دیگر حادثات میں2لڑکیاں اور ایک لڑکا جاں بحق،17افراد زخمی ہوئے اس سلسلے میں ملتان سے خبرنگار،وقائع نگار،جنرل رپورٹر کے مطابق ملتان اور گردونواح میں جمع کے روز تیز آندھی کے ساتھ کہیں ہلکی اور کہیں موسلا دھار بارش کے باعث گرمی کا زور ٹوٹ گیا جبکہ آندھی کے باعث معمولات زندگی درہم برہم ہوکر رہ گیا65کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار سے چلنے والی آندھی کے باعث سائن بورڈ،درخت زمین بوس ہوگئے جبکہ متعدد مقامات پر دیواروں کے گرنے کے حادثات بھی رونما ہوئے تاہم مجموعی طور پر موسم خوشگوار ہوگیا ملتان مین2.6ملی میٹر(بقیہ نمبر43صفحہ12پر )

بارش ریکارڈ کی گئی ملتان اور نواحی علاقے پچھلے کئی روز سے خشک موسم اور گرمی کی لپیٹ میں تھے مقامی محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے برعکس جمعہ کے روز سہ پہر3بج کر40منٹ پر65کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے تیز آندھی کے ساتھ موسلا دھار بارش شروع ہوگئی جس سے نظام زندگی متاثر ہوکر رہ گیا۔مقامی محکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران بارش ہونے کا امکان ہے۔دریں اثناء تھانہ پرانی کوتوالی کے علاقے حضوری باغ روڈ نزد گھنٹہ گھر پر واقع شاہ رکن عالم میرج ہال میں گزشتہ روز جمعہ کو ایک شادی کی تقریب منائی جارہی تھی اسی اثناء میں تیز آندھی اور موسلا دھار بارش شروع ہوگئی اچانک بجلی چلی گئی۔مذکورہ میرج ہال میں موجودہ بچوں اور لڑکیوں کے اوپر دیوار گرگئی جس کے نتیجے میں صفہ بی بی اور یسریٰ اپنی جان کی بازی ہار گئی جبکہ دیگر زخمیوں میں فیضان،عائشہ،مریم،حفصہ،عزیز فاطمہ کو شدید زخمی ہونے پر نشتر ہسپتال ریسکیو1122نے طبی امداد دینے کے بعد منتقل کردیا ہے جن کو ڈاکٹر طبی سہولیات فراہم کررہے ہیں جن کی حالت ابھی خطرے میں بتائی جاتی ہے۔دیوار گرنے کا دوسرا واقعہ تھانہ قطب پور کے علاقے سوئی گیس روڈ کے قریب پیش آیا جہاں تیز آندھی اور موسلہ دھار بارش کے باعث خالی پلاٹ کی چار دیواری اچانک نزدیکی کھیل میں مصروف بچوں پر گر گئی جس سے ایک7سالہ بچہ طیب موقع پر دم توڑ گیا ایک بچہ معمولی زخمی ہونے پر ریسکیو نے طبی امداد دینے کے بعد گھر واپس بھیج دیا جبکہ تیسرا بچہ کو تشویش ناک حالت میں نشتر ہسپتال منتقل کردیا ہے۔جس کا علاج جاری ہے۔اسی طرح قاسم بیلہ کے علاقے میں دیوار گرنے سے40سالہ نورین زوجہ مقصود زخمی ہوگئی۔جس کو ریسکیو نے طبی امداد کے بعد نشتر منتقل کردیا ہے پرانا شجاع آباد روڈ کے نزدیک گھر کی دیوار گرنے سے ایک شخص جنید زخمی ہوگیا۔جس کو طبی امداد دینے کے بعد فوراً نشتر منتقل کردیا ہے ریلوے روڈ پر پیپل کے درخت سے کئی گھنٹے روڈ بلاک رہا ہے جس کوامدادی ٹیم نے راستہ سے ہٹاکر روڈ کو کلیئر کردیاہے۔تیز آندھی اور بارش کے باعث ڈی ایس آفس کو جانے والے روڈ پر لگا ہو ا درخت بجلی کی تاروں پر گر گیا جس کے باعث ریلوے کالونی کی بجلی منقطع ہوگئی ریلوے کالونی کے مکینوں نے آئے روز درختوں کے گرنے کا نوٹس لینے اور کمزور تنوں کو کٹوانے کا مطالبہ کیا مکینوں کا کہنا تھا کہ درختوں کے گرنے کی وجہ سے جانی نقصان بھی ہوسکتا ہے جبکہ میپکو کی جانب سے تاریں جوڑنے اور بجلی کی بحالی کا کام رات گئے تک جاری تھا۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ،نامہ نگار کے مطابق شدید آندھی کی وجہ سے جنرل بس اسٹینڈ کی چھت کا شیڈ گرگیا جس کی وجہ سے چھت کے نیچے بیٹھے چھ مسافر شدید زخمی ہوگئے جنہیں فوری طور ریسکیو 1122نے طبی امداد دیکر کر فوراًڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کر دیا ہے جہاں اس کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے ، زخمیوں میں تین خواتین سمیت چھ افراد شامل ہیں حادثہ شیڈ کے ساتھ باندھی ہوئی ترپالوں کی وجہ سے پیش آیا لاری اڈا پر موجود ریٹرھی بانوں نے اپنے سائے کیلئے شیڈ کے ساتھ ترپالیں باندھ رکھی تھی جو آج تیزی آندھی کے پیش نظر ترپالوں کے ساتھ شیڈ بھی نیچے آگرا جس سے یہ حادثہ پیش آیا۔ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کے مطابق گزشتہ روز ٹھٹھہ صادق آباد ونواحی علاقوں میں شدید آندھی وطوفان کے ساتھ ہلکی ہلکی بارش کا سلسلہ شر وع ہوگیا،طوفان سے کپاس،مکئی سمیت دیگر فصلوں کو نقصان پہنچا ہے،جبکہ ٹھنڈی ہوا،بارش سے موسم خوشگوار ٹھنڈا ہوگیا،آندھی سے بجلی نظام معطل ہوگیا۔میلسی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق مقامی میرج ہال میں شہری مرزا ذوالفقار کی صاحبزادی کی رخصتی کی تقریب جاری تھی اسی دوران تیز آندھی چلنے سے شامیانے اکھڑ گئے اور ایک بانس سیدھا سٹیج پر بیٹھی دلہن کے سر میں جا لگا جس سے دلہن زخمی ہو گئی جسے فوری طور پر زخمی حالت میں ہسپتا ل پہنچایا گیا اور یوں دلہن اپنے سسرال پہنچنے کی بجائے ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ جا پہنچی۔ڈاہرانوالہ سے نامہ نگار کے مطابق ڈاہرانوالہ اور گرد و نواح میں آنے والے اچانک سیاہ گرد کے طوفان سے ہر طرف دن کے وقت اندھیرا چھا گیا۔لوگوں پر سکتہ طاری ہو گیا اور لوگ کلمہ طیبہ کا ورد کرنے لگے۔ٹریفک جام ہو گیا۔لوگوں کا ایک دوسرے کو پہچاننا مشکل ہو گیا۔خوف کے شکار لوگ ادھر اُدھر دوڑنے لگے۔طوفان کے باعث کپاس کی فصل کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔اچانک آنے والے اس گرد کے طوفان سے شہری پریشانی میں مبتلا ہوگئے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...