جعلی وکلاءکے تحفظ کے لئے بااثر مافیا کا مقابلہ نہیں کرسکتے ،پنجاب بار کونسل کی متعلقہ کمیٹی کے تمام ارکان مستعفی

جعلی وکلاءکے تحفظ کے لئے بااثر مافیا کا مقابلہ نہیں کرسکتے ،پنجاب بار کونسل ...
جعلی وکلاءکے تحفظ کے لئے بااثر مافیا کا مقابلہ نہیں کرسکتے ،پنجاب بار کونسل کی متعلقہ کمیٹی کے تمام ارکان مستعفی

  


لاہور(نامہ نگارخصوصی )عدالتوں کی سکیورٹی بہتر بنانے اور جعلی وکلاءکے خلاف سفارشات پر عمل درآمد نہ کرنے پر پنجاب بار کونسل کی سکیورٹی کمیٹی کے پانچوں عہدیداروں نے استعفی دے دیا،مستعفی چیئرمین سکیورٹی کمیٹی منیر بھٹی نے کہا ہے کہ جعلی وکلاءکے تحفظ کے لئے پنجاب بار میں بااثر مافیا موجود ہے جبکہ 38 یونیورسٹیاں جعلی ڈگریوں کی تصدیق نہیں کر رہیں۔

پنجاب بار کونسل کی کمیٹیوں سے مستعفی ہونے والے عہدیداروں نے اپنا استعفی پنجاب بار کونسل کے چیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی کے حوالے کر دیا ہے۔مستعفی ہونے والوں میں منیر بھٹی،جمیل بھٹی،ملک سرود،چودھری شاہ نواز اسماعیل اور عبدالصمد بسریا شامل ہیں۔پنجاب بار کونسل کی سکیورٹی کمیٹی کے مستعفی اراکین نے استعفی کے بعد پنجاب بار کونسل کی سیڑھیوں پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب باد کونسل کے اندر جعلی وکلاءکی پشت پناہی کا ایک بڑا مافیا موجود ہے۔

جاپان پر پھینکے گئے امریکی ایٹم بم کی وہ تصاویر منظر عام پر آگئیں جسے دیکھ کر کسی کا بھی دل دہل جائے

پنجاب بار کونسل میں گریڈ ایک سے لے کر سیکشن افسر تک جعلی وکلاءکی پشت پناہی کرتے ہیں جن کے سامنے منتخب نمائندے بھی بے بس دکھائی دیتے ہیں.انہوں نے بتایا کہ سانحہ مردان اور کوئٹہ کے بعد وکلائ کو سنگین خطرات ہیں مگر حکومتی پشت پناہی کے حامل وکلاءعہدیداران ہماری سفارشات پر عمل نہیں کر رہے،وکلاءکے تحفظ کے حوالے سے اجلاس بلایا جسے ثبوتاژ کرنے کی کوشش کی گئی۔

مزید : لاہور


loading...