شانگلہ کو دیدہ دانستہ پسماندہ رکھا گیا ،شوکت یوسفزئی

شانگلہ کو دیدہ دانستہ پسماندہ رکھا گیا ،شوکت یوسفزئی

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر) شا نگلہ‘تحریک انصاف کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات و رکن صوبائی اسمبلی شوکت علی یوسف زئی نے کہا ہے کہ شانگلہ پر سترہ سال سے برسراقتدار مخصوص ٹولہ نے شانگلہ کو ترقی کے بجائے پسماندگی میں دھکیل دیا ہے، عوام ائندہ عام انتخابات میں ان کا کھڑا احتساب کرے گی۔ گز شتہ کئی سالوں سے شانگلہ کے اربوں روپے فنڈ ہڑپ کرکے اپنے ذاتی مفادات کے خاطر صوبے کے دیگر اضلاع میں خرچ کئے جارہے ہیں جبکہ اس علاقے کو کسی نے ذرا بھی توجہ نہیں دی ہے۔ ان خیالات کا اظہار شوکت علی یوسف زئی نے گزشتہ روز یونین کونسل الپوری کے بالائی علاقے مانئی سر میں شمولیتی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر سینکڑوں کی تعداد میں سیاسی افراد نے پاکستان مسلم لیگ(ن) ، پاکستان پیپلز پارٹی،عوامی نیشنل پارٹی سے مستعفی ہوکر تحریک انصاف میں شمولیت کا باقاعدہ طور پر اعلان کیا۔ شمولیتی تقریب سے انصاف ٹئیگرفورس کے سابق صوبائی چیف اختر علی چٹان، تحریک انصاف کے رہنما انجینئر عبدالتواب خان، حاجی روزی خان اور دیگر نے خطاب کیا ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شوکت یوسف زئی کا کہنا تھا شانگلہ کے کونے کونے میں ریکارڈ ترقیاتی کام کئے جارہے ہیں باوجود اس کے کہ وہ پشاور سے منتخب ہوئے ہے لیکن شانگلہ آباؤ اجداد ہونے کی وجہ سے اس علاقے کی ترقی کو نصب العین سمجھا جاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ جن کے لیڈر چور ثابت ہوئے ہیں وہی لوگ شانگلہ میں گزشتہ پندرہ سال سے برسر اقتدار ہیں اور شانگلہ کی ترقی کے بجائے شانگلہ کی ترقیاتی فنڈز اپنے مفادات کیلئے خرچ کررہے ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے بالائی علاقوں میں دو مختلف سڑکوں کے تعمیر کیلئے پچاس،پچاس لاکھ کا فنڈ دینے کا اعلان کیا جبکہ علاقہ میں مسجد کی تعمیر کا اعلان کیا جبکہ مقامی لوگوں کو سکول کی تعمیر میں رکاؤٹیں ختم کرنے کی یقین دیہانی بھی کرائی گئیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر