معروف مذہبی سکالر نعمان علی خان کے لڑکیوں کو نازیبا میسجز، قابلِ اعتراض تصاویر منظر عام پر آگئیں، ہر پاکستانی کا منہ کھلا کا کھلا رہ گیا

معروف مذہبی سکالر نعمان علی خان کے لڑکیوں کو نازیبا میسجز، قابلِ اعتراض ...
معروف مذہبی سکالر نعمان علی خان کے لڑکیوں کو نازیبا میسجز، قابلِ اعتراض تصاویر منظر عام پر آگئیں، ہر پاکستانی کا منہ کھلا کا کھلا رہ گیا

  


نیویارک / ڈلاس (ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکہ میں مقیم معروف مذہبی سکالر نعمان علی خان کو اپنی خواتین پیروکاروں کو نازیبا پیغامات بھیجنے کے الزامات کا سامنا ہے۔ دوسری جانب نعمان علی خان نے الزامات لگانے والے شخص سے اظہار لا تعلقی کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان پر لگے الزامات کی حقیقت جاننے کیلئے مناظرہ کیا جائے۔

یہ خبر بھی پڑھیں۔۔۔ اب آپ انٹرنیٹ پر نیلامی میں حصہ لے کر جہاز بھی خرید سکتے ہیں، آسان طریقہ جانئے

نعمان علی خان پر الزامات کا سلسلہ اس وقت شروع ہوا جب عمر محمد مظفر نامی شخص نے ایک فیس بک پوسٹ کے ذریعے کھلا خط لکھا اور دعویٰ کیا کہ وہ گزشتہ بیس سال سے نعمان خان کا قریبی دوست ہے۔ اپنی فیس بک پوسٹ میں مظفر نے دعویٰ کیا کہ وہ کچھ عرصے سے نعمان کی جانب سے اپنی خواتین پیروکاروں کو بھجوائے جانے والے نازیبا پیغامات کے کیس کی تحقیقات کر رہا ہے۔

مظفر نے الزام لگایا کہ نعمان علی خان خواتین کو نازیبا پیغامات بھیجنے کا اعتراف کر چکا ہے، جبکہ سکالر نے معاملے کی تحقیق کرنے والوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دی ہیں۔ مظفر نے یہ بھی دعویٰ کیا ہے کہ جب معاملہ بگڑنے لگا تو ڈلاس کے مقامی علما نے مداخلت کی اور تحقیقات مکمل ہونے تک نعمان علی خان کو لیکچر دینے سے روک دیا۔

مظفر نے بتایا کہ نعمان علی خان کی طلاق ہو چکی ہے اس لیے وہ ایک بیوی کی تلاش میں سرگرداں ہے اور اسی چکر میں خواتین کو نازیبا پیغامات بھیج رہا ہے۔مظفر کے علاوہ ایک اور مذہبی شخصیت ناوید عزیز نے بھی نعمان علی خان پر اسی قسم کے الزامات عائد کیے ہیں۔

دوسری جانب نعمان علی خان نے خود پر لگنے والے الزامات کو مسترد کردیا اور کہا ہے کہ وہ مناظرے کیلئے تیار ہیں تاکہ تمام معاملات کی حقیقت واضح ہو سکے۔انہوں نے کہا کہ وہ گزشتہ بیس سال سے بینہ انسٹیٹیوٹ چلا رہے ہیں اس دوران ان کے کیمپس میں ہزاروں خواتین آئی ہیں لیکن کبھی بھی کسی کی جانب سے ہراسگی کی شکایت نہیں کی گئی۔

17سالہ بچہ ا چانک اندھا ہوگیا، ڈاکٹر کے پاس گیا تو اسے اس کی آنکھ میں پھرتی کیا چیز نظر آگئی؟ دیکھ کر آپ بھی کانپ اُٹھیں گے، ڈاکٹر نے بھی ایسا منظر کبھی نہ دیکھا تھا کہ۔۔۔

نعمان علی خان نے کہا کہ وہ دوبارہ شادی کرنا چاہتے ہیں لیکن اس کا یہ مطلب ہر گز نہیں ہے کہ وہ ہر کسی کو پیغامات بھیجنا شروع کردیں بلکہ انہوں نے اس کیلئے اپنے خاندان کے بزرگوں سے بات کی ہے اور وہی ان کیلئے رشتہ دیکھ رہے ہیں، اس دوران دونوں خاندانوں کی رضا مندی سے اس کی چند ایک خواتین سے بات چیت ہوئی ہے جسے غلط رنگ دے کر اچھالا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ نعمان علی خان عالمی شہرت کے حامل مسلم سکالر ہیں جو جرمنی میں پیدا ہوئے اور امریکہ میں مقیم ہیں۔ انہوں نے بینہ انسٹیٹیوٹ کے نام سے ایک ادارہ بنا رکھا ہے جس میں وہ عربی زبان سکھاتے ہیں ۔ نعمان علی خان نے ابتدائی تعلیم سعودی عرب سے حاصل کی جس کے بعد وہ پاکستان آئے اور 1993 میں تعلیم سے فراغت کے بعد امریکہ چلے گئے۔وہ امریکہ میں بین المذاہب مذاکروں کے حوالے سے بھی خاصی شہرت رکھتے ہیں ، وہ خود کو مولانا طارق جمیل کا معتقد سمجھتے ہیں جبکہ مولانا بھی کئی بار ان کے انسٹیٹیوٹ کا دورہ کر چکے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس