حکمرانوں سے نجات کیلئے مہم شروع کرنیکا منصوبہ فائنل‘ افتخار خان 

  حکمرانوں سے نجات کیلئے مہم شروع کرنیکا منصوبہ فائنل‘ افتخار خان 

  

 مظفرگڑھ(نامہ نگار) پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات اور رکن قومی اسمبلی نوابزادہ افتخار احمد خان نے کہا ہے کہ حکومت کامیاب اے پی سی کے بعد بوکھلاہٹ کا شکار ہے, پہلی بار اپوزیشن نے جس اتحاد کا مظاہرہ کیا اس نے حکمرانوں کو لرزہ براندام (بقیہ نمبر47صفحہ 7پر)

کر کے رکھ دیا ہے, بلاول بھٹو زرداری نے اپنے سیاسی فہم کا جس طرح لوہا منوایا ہے اس نے بڑے بڑے سیاستدانوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے, سیف نگر خان گڑھ میں پریس کلب خان گڑھ کے عہدے داران کے اعزاز میں دئیے گئے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کو پہلی کی کلاس کی طرح چلایا جا رہا ہے, قانونی اور پارلیمانی تقاضے پورے کئے بغیر بلز پاس کئے جا رہے ہیں, قانون سازی کے دوران اپوزیشن کی تجاویز کو رد کرنا معمول بن چکا ہے جو پارلیمانی روایات اور اصولوں کے خلاف طرز عمل ہے, افتخار خان نے کہا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے پلیٹ فارم سے ملک بچاؤ مہم شروع کی جا رہی ہے تاکہ عوام کو ان نااہل حکمرانوں سے نجات دلائی جا سکے, پی ڈی ایم کا تنظیمی ڈھانچہ تشکیل دیا جا رہا ہے جس کا جلد اعلان کر دیا جائے گا, انہوں نے کہا کہ فیفٹا اور منی لانڈرنگ کے حوالے سے جو بلز لائے گئے ان کو مزید بہتر بنانے اور آئندہ کسی بھی سیاست دان کے خلاف اسے انتقامی طور پر استعمال کئے جانے سے روکنے کی تجاویز دی گئیں لیکن تمام بلز یک طرفہ طور پر پاس کر لئے گئے اور ان کی منظوری کے لئے پارلیمانی طریقہ بھی اختیار نہیں کیا گیا, جس پر اپوزیشن نے متفقہ احتجاج اور بائیکاٹ کیا, ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ حکومت کو اے پی سی کی اتنی بڑی کامیابی کا یقین ہی نہیں تھا, انہوں نے کہا کہ اپوزیشن اراکین کو ترقیاتی بجٹ کا ایک روپیہ نہیں دیا گیا جو امتیازی سلوک ہے, نوابزادہ افتخار احمد خان نے کہا کہ بلاول بھٹو کی زیر صدارت اے پی سی نے بابائے جمہوریت نوابزادہ نصراللہ خان کی زیرصدارت ہونے والے اپوزیشن اتحادوں کے اجلاسوں کی یاد تازہ کر دی وہ بڑے منظم انداز سے اپوزیشن کو چلاتے تھے, اب ملک کو ان جیسی لیڈر شپ کی ضرورت ہے, تاکہ ملک و قوم نااہل حکمرانوں سے چھٹکارہ حاصل کر سکے, اس موقع پر صدر پریس کلب رانا امجد علی امجد, ملک نذیر سندیلہ, ملک رضوان الرحمن, سردار محمد معظم ڈوگر, جنرل سیکرٹری مہر راشد نصیر سیال, ملک عبدالغفور سندیلہ, عرفان اللہ خان, ملک کریم بخش فوجی, ملک زاہد حسین سندیلہ, قاری خالد محمود ضیاء, سہیل امیر خان, پیپلزپارٹی کے راہنماء  نواب زادہ عمران احمد خان, ملک عبدالرزاق جھانب, ساجد حلیم خان, حفیظ الرحمن خان, منصور احمد خان, اور دیگر موجود تھے۔

افتخار خان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -