جلد آ      کہ زندگی ہے پریشاں ترے بغیر | جوش ملیح آبادی |

جلد آ      کہ زندگی ہے پریشاں ترے بغیر | جوش ملیح آبادی |
جلد آ      کہ زندگی ہے پریشاں ترے بغیر | جوش ملیح آبادی |

  

ترے بغیر

جلد آ      کہ زندگی ہے پریشاں ترے بغیر

اب زہر ہے یہ چشمۂ حیواں ترے بغیر

مضطر ہے روحِ لالہ و نسریں ترے بغیر

برہم ہے زلفِ سنبل و ریحاں ترے بغیر

جس کا ہر ایک شعبہ تھا گلِ بانگ صد نشاط

شیون ہے اب وہ لحنِ ہزاراں ترے بغیر

چھٹتی ہے نبضِ سیرِ چمن تیری یاد میں

ڈستا ہے ابر و کوہ و بیاباں ترے بغیر

پھیکا ہے رنگِ لالہ و گل تیرے ہجر میں

گونگے ہیں طائرانِ خوش الحاں ترے بغیر

دامن ہے پارہ پارہ نہ دھو میں چمن چمن

کیا  کیا بہار سے ہوں پشیماں ترے بغیر

جلد آ       کہ شوقِ دید میں لیلائے زندگی

بھولی ہوئی جنبشِ مژگاں ترے بغیر

اے فتنۂ زمانۂ آشوبِ روزگار

سونی پڑی ہے انجمنِ جاں ترے بغیر

لرزاں تھی جس کے پنجۂ وحشت سے کائنات

اب وہ جنوں ہے سر بہ گریباں ترے بغیر

اِک اشکِ خوں ہے تری جدائی میں نجمِ صبح

اِک شامِ غم ہے صبحِ بہاراں ترے بغیر

اِک زخم دشنہ ہے تری فرقت میں بوئے گل

اِک داغِ تازہ ہے مہِ تاباں ترے بغیر

اے دخترِترنم وائے بنتِ ابر و باد

کیوں کر کٹے گا موسمِ باراں ترے بغیر

شاعر: جوش ملیح آبادی

(مجموعہ کلام: حرف و حکایت؛سال اشاعت،1943 )

Tiray    Baghair

Jald   Aa   Keh   Zindagi   Hay   Pareshaan  Tiray  Baghair

Ik    Zehr   Hay   Yeh     Chashma-e-Haiwaan   Tiray  Baghair

Muztir   Hay    Rooh-e-Laala-o-Nasreen   Tiray    Liay

Barham   Hay   Zulf-e- Sunmbal -o-Rehaan  Tiray  Baghair

Jiss   K a   Har   Aik   Shoba   Tha   Gul   Baang-e-Sadd   Nishaat

Shiwan   Hay   Ab   Wo   Lehn -e-Hazaraan   Tiray  Baghair

Chhitti   Hay   Nabz-e-Sair -e-Chaman   Teri   Yaad   Men

Dastahay   Abr-e-Koh-o-Bayabaan   Tiray  Baghair

Pheekha   Hay   Rang-e-Laala -o-Gull   Teray   Hijr    Men

Goongay   Hen   Taiyraan-e-Khush   Elhaan  Tiray   Baghair

Daaman   Hay   Paara   Paara  Na   Dho   Men   Chaman   Chaman

Kaya   Kaya   Bahrar   Say   Hon   Pashemaan   Tiray  Baghair

Jald   Aa   Keh   Shaoq-e-Deed   Men   Lailaa-e-Zindagi

Bhooli   Hui   Hay   Junbash-e-Mizzgaan   Tiray  Baghair

 Ay    Fitna -e-Zamaana-e-Ashob-e-Rozgaar

Sooni   Parri   Hay Anjuman-e-Jaan   Tiray  Baghair

Larzaan   Thi   Jiss   K   Panjaa-e-Wehshat   Say   Kainaat

Ab   Wo    Junoon   Hay   Sar   Ba   Garebaan   Tiray  Baghair

Ik   Ashk-e-Khoon   Hay  Tiri   Judaai   Men   Najm-e-Subh

Ik   Shaam -e-Gham   Hay   Subh-e-Baharaan   Tiray  Baghair

Ik   Zakhm-e-Dushna   Hay   Tiri    Furqat    Men    Boo-e-Gull

Ik   Daagh-e-Taaza   Hay   Mah-e-Tabaan   Tiray  Baghair

Ay   Dukhtar-e-Tarannum   Waa-e-Bint-e-Abr -o-Baad

Kiun   Kar    Kattay   Ga   Maosam -e- Baraan   Tiray  Baghair

Poet: Josh   Malihabadi

مزید :

شاعری -سنجیدہ شاعری -غمگین شاعری -