سب سے انوکھی کہانی، خاتون نے اپنے ہمسفر کو بے وفائی کرتے پکڑا تو تعلق ختم کرلیا لیکن کاروبار ابھی بھی دونوں اکٹھے چلاتے ہیں

سب سے انوکھی کہانی، خاتون نے اپنے ہمسفر کو بے وفائی کرتے پکڑا تو تعلق ختم ...
سب سے انوکھی کہانی، خاتون نے اپنے ہمسفر کو بے وفائی کرتے پکڑا تو تعلق ختم کرلیا لیکن کاروبار ابھی بھی دونوں اکٹھے چلاتے ہیں
سورس: instagram/nickyclarkeuk

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) طلاق کے بعد سابق میاں بیوی ایک دوسرے کی شکل بھی شاذ ہی دیکھتے ہیں لیکن برطانیہ میں اس میاں بیوی نے طلاق کے باوجود نہ صرف ایک ہی گھر میں رہائش رکھی بلکہ اپنے مشترکہ کاروبار کو بھی جاری رکھا اور اسے 6کروڑ پاﺅنڈ مالیت کے ایک بزنس امپائر میں بدل دیا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ جوڑا 67سالہ لیزلے اور اس کا 62سالہ سابق شوہر نکی کلارک ہیں۔ 23سال قبل دونوں میں اس وقت طلاق ہو گئی جب نکی کلارک نے سوزی نامی ایک ماڈل کے ساتھ معاشقہ چلا لیا جو اس سے عمر میں کہیں چھوٹی تھی۔ جب لیزلے کو اس کے معاشقے کے بارے میں علم ہوا تو نکی نے فوری طور پر سوزی کے ساتھ تعلق ختم کر لیا لیکن لیزلے کا کہنا ہے کہ ان کے رشتے کو جو نقصان پہنچنا تھا وہ پہنچ چکا تھا چنانچہ اس نے نکی سے طلاق لینے کا فیصلہ کر لیا۔ 

رپورٹ کے مطابق نکی اور لیزلے نے اکٹھے لگژری سیلون کا کاروبار شروع کیا تھا جو انہوں نے طلاق کے بعد بھی جاری رکھا اور اب ان کا یہ کاروبار 60کروڑ پاﺅنڈ سے زائد مالیت کو چھو رہا ہے اور برطانیہ کی شوبز شخصیات انہی کے سیلونز سے میک اپ کرواتی ہیں۔ لیزلے اور نکی اب بھی اپنے 5منزلہ لگژری گھر میں رہتے ہیں۔ لیزلے اوپر رہتی ہے اور نکی اپنی نئی شریک حیات کے ساتھ دو منزل نیچے رہتا ہے۔ نکی نے اپنی ایک سیلون جونیئر کے ساتھ بعد ازاں تعلق قائم کر لیا تھا اور اسے اپنے ساتھ اس گھر میں شفٹ کر لیا تھا۔ اس کے باوجود لیزلے اور نکی نے گھر الگ کیا نہ ہی کاروبار۔ لیزلے اور نکی کا ایک33سالہ بیٹاہیریسن اور 31سالہ بیٹی ٹیلیزا ہیں جو اب شادی شدہ ہیں اور ان کے آگے دو بچے ہیں۔ان بچوں کی عمریں 1اور 4سال ہے اور دوسری طرف نکی نے اپنی دوسری شریک حیات سے دو بچے پیدا کیے ہیں اور اتفاق سے ان کی عمریں بھی 1اور چار سال ہی ہیں۔ یہ چاروں بچے گھر میں گاہے اکٹھے ہو جاتے ہیں اور کھیلتے ہیں۔ 

لیزلے نے میل آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ”نکی گاہے اپنے بچے کے ساتھ میرے پاس آ جاتا ہے۔ میں اس کے بیٹے کو اپنے پوتے کے کھلونے دے دیتی ہوں اور وہ کھیلتا رہتا ہے۔ اس دوران ہم ڈرائینگ روم میں بیٹھ کر باتیں کرتے رہتے ہیں۔ ہم عموماً کاروبار سے متعلق ہی بات کرتے ہیں۔ ہم نے اکٹھے کٹھن زندگی بھی دیکھی ہے اور پھر اکٹھے ہی ہم نے یہ کاروبار شروع کیا تھا۔ ہم دونوں نے ایک دوسرے کے بغیر کاروبار چلانے کا کبھی سوچا بھی نہیں تھا چنانچہ طلاق کے بعد بھی ہمیں کاروبار الگ کرنے کی ہمت نہیں ہوئی۔“ اپنے طلاق کے فیصلے کے متعلق بات کرتے ہوئے لیزلے کا کہنا تھا کہ ”آج بھی میں اپنے طلاق کے فیصلے پر پچھتاتی ہوں، مجھے ایسا نہیں کرنا چاہیے تھا۔ یہ ایک خوفناک فیصلہ تھا جو مجھ سے سرزد ہو گیا اور ایسے وقت میں ہوا جب میں کمزور تھی مگر اب کیا کیا جا سکتا ہے کہ ہمیں اپنے ترجیحات کے ساتھ زندہ رہنا پڑتا ہے۔ میرا زندگی کے متعلق فلسفہ یہ ہے کہ ’کامیابی ماضی میں اٹکے رہنے سے نہیں ملتی‘ چنانچہ میں نے بھی ماضی کو بھلا کر نکی کے ساتھ تعلق قائم رکھا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -