معیشت تباہی کا شکار، کسی ادارے کو قوم کی لوٹی دولت معاف کرنے کا حق نہیں: سراج الحق 

معیشت تباہی کا شکار، کسی ادارے کو قوم کی لوٹی دولت معاف کرنے کا حق نہیں: سراج ...

  

لاہو ر(این این آئی) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم اور پی ٹی آئی کی پالیسیوں میں کوئی فرق نہیں، موجودہ اور سابقہ وزیراعظم دونوں اسٹیبلشمنٹ کے لاڈلے ہیں، سیلاب سے لاکھوں لوگ بے گھر ہو گئے، حکمران نیب کیسز معاف کرانے میں مصروف، کسی ادارے کو قوم کی لوٹی ہوئی دولت معاف کرنے کا حق نہیں،معیشت تباہی کا شکار، وزیراعظم کی کابینہ میں ہر آئے روز توسیع کر دی جاتی ہے، قوم کے پیسوں پر سرکاری پروٹوکول، گاڑیاں اور رہائشیں انجوائے کرنیوالے جاگیردار اور وڈیرے ملک پر بوجھ ہیں، موجودہ حکومت نے چار ماہ میں ہی عوام پر ظلم کی انتہا کر دی، ڈالر 250روپے کے برابر ہو گیا، اشیائے خورونوش، پٹرول، بجلی اور گیس کی قیمتیں 99فیصد عوام کی پہنچ سے دور ہو چکی ہیں، مہنگی بجلی اور بلوں میں درجن بھر ناجائز ٹیکسز کے خلاف احتجاجی تحریک کا آغاز کیا تھا جو سیلاب کی صور تحال کے پیش نظر موخر کر دی، عوام کو ریلیف ملنے تک جدوجہد جاری رہے گی، سیلاب متاثرین کی بحالی کے لیے ایمرجنسی اقدامات اور سرکاری امداد کی شفاف تقسیم کا نظام وضع کیا جائے، تعمیر نو کے کاموں میں وفاقی اور صوبائی حکومتوں نے کوآرڈی نیشن قائم نہ کی اور آپسی لڑائیاں جاری رکھیں تو بحران بدترین شکل اختیار کر سکتا ہے منصورہ میں سیکرٹری جنرل امیرالعظیم اور سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف کے ہمراہ پریس کانفرنس کر رہے تھے۔ٹرانس جینڈر بل پر گفتگو کرتے ہوئے امیر جماعت نے کہا کہ جماعت اسلامی چاہتی ہے کہ خواجہ سرا کمیونٹی کو ان کے حقوق ملیں، لیکن نام نہاد قانون معاشرے میں بگاڑ کی وجہ بن رہا ہے اسی لیے جماعت اسلامی نے سینیٹ میں اس ایکٹ میں ترامیم کا بل پیش کیا ہے، ہم چاہتے ہیں کہ اگر کوئی شخص اپنی جنس تبدیل کروانا چاہتا ہے تو میڈیکل بورڈ سے اس کی منظوری لے، گھریلو تشدد کے قانون کی طرح ٹرانس جینڈر بل بھی ہماری تہذیب پرحملہ اور مغربی ایجنڈا ہے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -