اقوام متحدہ  کا پاکستان کیلئے ڈونرز کانفرنس کرنے کا فیصلہ

اقوام متحدہ  کا پاکستان کیلئے ڈونرز کانفرنس کرنے کا فیصلہ

  

       نیویارک(آئی این پی) اقوام متحدہ نے پاکستان کیلئے ڈونرز کانفرنس کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے، ڈونرز کانفرنس رواں سال کے آخر تک منعقد کی جائیگی، ڈونرز کانفرنس کے ذریعے پا کستان کو سیلاب سے نمٹنے کیلئے خاطر خواہ امداد ملے گی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اقوام متحدہ اب ڈونرز کانفرنس کا خود انعقاد اور میزبانی کریگا، پاکستان کیلئے ڈونرز کانفرنس اس سال کے آخر تک منعقد کی جائے گی،ڈونرز کانفرنس میں فرانس بھی میزبانی کریگا۔ اقوام متحدہ نے پاکستان کیلئے ڈونرز کی کانفرنس کی تیاریاں شروع کردی ہیں۔ ڈونرز کانفرنس کیلئے عالمی برادری کی جانب سے فوری اور مثبت جوابی ردعمل ہوگا، ڈونرز کانفرنس کے ذریعے پاکستان کو سیلاب سے نمٹنے کیلئے خاطر خواہ امداد ملے گی۔دوسری جانب جرمن نشریاتی ادارے کا کہنا ہے برطانوی اخبار فنانشل ٹائمز نے اقوام متحدہ کی ایک پالیسی دستاویز کا حوالہ دیتے ہوئے کہا پاکستان کو قرض دینے والے ممالک کو قرضوں کی واپسی میں ریلیف دینے پر غور کرنا چاہئے تاکہ پاکستانی حکام سیلاب متاثرین کیلئے امدادی سرگرمیوں پر توجہ زیادہ مرکوز کرسکیں۔ادھر اقوام متحدہ کے ڈویلپمنٹ پروگرام(یو این ڈی پی) نے کہا ہے پاکستان کو عالمی قرضوں کی ادائیگی میں ریلیف ملنا چاہیے۔ یو این ڈی پی کے پالیسی میمور ینڈ م میں کہا گیا ہے پاکستان کو قرض فراہم کرنیوالے عالمی اداروں اور ممالک کو قرضوں کی واپسی کیلئے پاکستان کو ریلیف دینا چاہیے تاکہ اسے ماحولیاتی تبدیلی کے باعث آنیوالے سیلاب کی تباہ کاریوں سے نمٹنے کا موقع مل سکے۔ یو این ڈی پی کے پیپر میں مزید کہا گیا ہے سیلاب سے متاثر ہ پاکستان کو عالمی قرضوں کی ادائیگی معطل کر نی چاہیے۔ پاکستان میں سیلاب سے بڑے انسانی بحران نے جنم لیا ہے اور پاکستان کی معیشت کو نقصان پہنچایا ہے۔ پاکستان کو قرض فراہم کرنیوالے اداروں اورممالک سے اسے ری شیڈول کرنے کی درخواست کرنا چاہیے۔ اس اقدام کا مقصد ماحولیاتی تبدیلی کے باعث ہونیوالے بحران اور اس کے نقصان سے نمٹنا ہے۔پاکستان کو قرض فراہم کرنیوالا سب سے بڑا ملک چین ہے جس نے پاکستان کو بیلٹ اینڈ روڈ اینی شی ایٹو کے تحت 30 بلین ڈالرز فراہم کئے ہیں۔ پاکستان کو قرض فراہم کرنیوالے دیگر ملکوں میں جاپان، فرانس، ورلڈ بینک اوردیگر کمرشل بونڈ ہولڈرز شامل ہیں۔ پاکستان میں تباہ کن سیلاب سے 3کروڑ افراد متاثر ہوئے ہیں اور 30 کروڑ ڈالرکا نقصان ہوا ہے۔

اقوام متحدہ

مزید :

صفحہ اول -