اعلیٰ فوجی افسران کیلئے ریٹائرمنٹ  پر 6 ہزار سی سی بلٹ پروف  گاڑی پر ٹیکس کی چھوٹ

اعلیٰ فوجی افسران کیلئے ریٹائرمنٹ  پر 6 ہزار سی سی بلٹ پروف  گاڑی پر ٹیکس کی ...

  

 اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی حکومت نے لیفٹیننٹ جنرلز اور اس سے اوپر کے افسران کو ریٹائرمنٹ پر 6000 سی سی تک کی بلٹ پروف گاڑیاں بغیر ٹیکسوں اورکسٹمز ڈیوٹی کے درآمد کرنے کی مشروط اجازت دیدی ہے۔ ایف بی آر کے جاری کردہ نوٹی فکیشن کے مطابق لیفٹیننٹ جنرلز، آرمی چیف، چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف کمیٹی اور سروسز چیفس کو ریٹائرمنٹ کے بعد 6000 سی سی تک کی گاڑیاں منگوانے پر کسٹمز ڈیوٹی، سیلز ٹیکس، ودو ہولڈنگ ٹیکس، فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی سمیت تمام ٹیکسوں کی چھوٹ ہوگی۔نوٹیفکیشن کے مطابق آرمی چیف، چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف کمیٹی اور سروسز چیفس سمیت تمام فور اسٹار جرنلز دو گاڑیاں ڈیوٹی و ٹیکسوں کے بغیر درآمد کرسکیں گے۔آرمی چیف، چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف کمیٹی اور سروسز چیفس کی جانب سے بغیر ڈیوٹی و ٹیکسوں کے منگوائی جانے والی بلٹ پروف گاڑیاں ایف بی آر سے پیشگی منظوری کے بغیر 5 سال تک فرو خت نہیں کی جاسکیں گی جبکہ 5 برس سے پہلے گاڑیوں کی فروخت پر تمام ڈیوٹی،ٹیکس وصول کیے جائیں گے۔نوٹیفکیشن کے مطابق لیفٹیننٹ جنرلز، آرمی چیف، چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف کمیٹی اور سروسز چیفس کو ریٹائرمنٹ کے وقت ڈیوٹی، ٹیکسوں کے بغیر بلٹ پروف گاڑیاں وزارت دفاع کی سفارش پر منگوانے کی جازت ہوگی۔

ٹیکس چھوٹ

مزید :

صفحہ اول -