جنسی زیادتی کیخلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ 

  جنسی زیادتی کیخلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ 

  

پشاور (سٹی رپورٹر)تنظیم تحفظ کاریگران واسکٹ نے ایبٹ میں چارسدہ کے رہائشی گیارہ 13 بچے کیساتھ جنسی زیادتی کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے صوبائی حکومت اور ائی جی خیبر پختونخوا سے مطالبہ کیا ہے کہ ملزموں کو فوری گرفتار کر کے انصاف فراہم کیا جائے بصورت دیگر احتجاج کا دائر کار وسیع کرینگے مظاہرے کی قیادت صدر ایاز خان سمیت کثیر تعداد میں متاثرہ بچے کے رشتہ داروں نے شرکت کی مظاہرین کا کہنا تھا کہ دو ہفتے قبل چارسدہ سے تعلق رکھنے والے محنت کش کے تیرہ سالہ بیٹے عبداللہ کو ایبٹ   کے مقامی با اثر شخص نے سکول داخل کرنے کے بہانے ساتھ لے گیا لیکن ایبٹ آباد پہنچ کر معصوم بچے کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا  تاہم مزکورہ بچہ کسی طرح بھاگ کر اپنے گھر پہنچا اور اپنے والد کو ساری صورتحال سے اگاہ کیا جس پر بچے کے والد  نے ایبٹ آباد کے متعلقہ پولیس سٹیشن میں اس واقعہ کی ایف ائی ار درج کروائی لیکن پولیس دو ہفتے گزرنے کے باوجود اس واقعہ میں ملوث ملزمان کی گرفتاری میں ٹال متول سے کام لینے لگی انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ واقعہ میں ملوث ملزمان کو فوری گرفتار کر کے غریب اور معصوم بچے کو انصاف فراہم کیا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -