کیو ڈبلیو پی کی چیف سیکرٹری کو منڈا ہیڈ ورکس کی بحالی کیلئے خط 

  کیو ڈبلیو پی کی چیف سیکرٹری کو منڈا ہیڈ ورکس کی بحالی کیلئے خط 

  

پشاور (سٹی رپورٹر)قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپاؤ نے حالیہ سیلاب سے متاثرہ منڈا ہیڈ ورکس کی فوری طور پر عارضی بحالی کیلئے چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا کو خط لکھ دیا۔قومی وطن پارٹی کے سیکرٹریٹ سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز کے مطابق خط میں لکھا گیا ہے کہ  حالیہ سیلاب میں منڈا ہیڈ ورکس کو شدید نقصان پہنچا۔ منڈا ہیڈ ورکس لوئر سوات کینال، تنگی لفٹ ایریگیشن سکیم، دوآبہ کینال، اور شولگرہ کینال سسٹم کو سیراب کرتا ہے۔ کل کمانڈ ایریا 189,300 ایکڑ ہے جو 3 اضلاع چارسدہ، مردان اور نوشہرہ پر محیط ہے۔ ان تینوں اضلاع سے تعلق رکھنے والی آبادی کی اکثریت کا انحصار زراعت پر ہے، جن کی اہم فصلیں گنا،گندم، پھلوں کے آرکڈ اور سبزیاں ہیں۔خط میں کہا گیا کہ موجودہ صورتحال میں گنے کی فصل، پھلوں کے درختوں اور سبزیوں کے لیے فوری طور پر پانی کی فراہمی کی ضرورت ہے۔ گندم کی بوائی اکتوبر کے آخری ہفتے میں شروع ہونی ہے اور ان فصلوں کے لیے پانی کی مستحکم فراہمی کا بندوبست ناگزیر ہے۔خط میں کہا گیا ہے کہ منڈا ہیڈ ورکس کی مکمل بحالی کے لیے کافی وقت درکار ہے تاہم سیلاب کی وجہ سے ملک ہنگامی صورتحال سے گزر رہا ہے اور ایسے حالات میں لوگوں کو عارضی بحالی کے ذریعے فوری ریلیف دینے کی ضرورت ہے۔خط میں تینوں اضلاع کی زرعی زمینوں کو جلد از جلد پانی کی فراہمی کو ممکن بنانے میں ذاتی دلچسپی لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔خط میں واضح کیا گیا کہ اس میں کسی قسم کی تاخیر کا نتیجہ نہ صرف اس سال کے فصلوں پر منفی اثر پڑے گابلکہ گنے کی فصل، اور اگلے سال کی گندم کی فصل کو بھی خطرے میں ڈالے گی جس کے نتیجے میں صوبے کی زرعی پیداوار میں کمی آئے گی۔چیف سیکرٹری کولکھے گئے خط میں اس حوالے سے کسانوں کی بے چینی سے بھی آگاہ کرتے ہوئے اس مسئلے کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -