عالمی ادارہ صحت کے نمائندہ ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا ڈیرہ پہنچ گئے

  عالمی ادارہ صحت کے نمائندہ ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا ڈیرہ پہنچ گئے

  

پشاور (سٹاف رپورٹر)عالمی ادارہ صحت کے نمائندہ ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا متاثرین سیلاب کی مدد کیلئے ڈیرہ اسماعیل خان پہنچ گئے۔انہوں نے ڈی ایچ او آفس ڈیرہ اسماعیل خان میں سیلاب متاثرین کیلئے فوری رسپانس اور معاونت کے لئے ایمرجنسی آپریشن سنٹر کا افتتاح کیا جبکہ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں طبی امداد کی بہتر فراہمی کیلئے ادویات کی بڑی کھیپ محکمہ صحت کے حوالے کردی۔ اس سلسلے میں ڈی ایچ او آفس میں منعقدہ تقریب میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر محمد اقبال وزیر، ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈیرہ محمود بھٹنی کے علاوہ محکمہ صحت اور ڈبلیو ایچ او کے افسران و نمائندوں نے شرکت کی۔اس موقع پر ڈیرہ اسماعیل خان میں سیلاب کی تباہی اور محکمہ صحت کی کارکردگی اور ضروریات بارے عالمی ادارہ صحت کی ٹیم کو بریفنگ دی گئی جس پر ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا نے ڈبلیو ایچ او کی جانب سے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی۔تقریب کے دوران ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے فلڈ ایمرجنسی رسپانس میں ایک کمیونیکیشن آفیسر اور دو ڈیزیز سرویلنس افسران کی خدمات محکمہ صحت کے سُپرد کی ہیں۔ اسی طرح ڈیرہ اسماعیل خان کے 22جزوی یا مکمل طور پر تباہ مراکز صحت کی بحالی کیلئے عالمی ادارہ صحت معاونت کرے گا۔ مشکل کی اس گھڑی میں عالمی ادارہ صحت سمیت تمام یو این مشنز پاکستان کیساتھ کھڑے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ہیلتھ ایمرجنسی کیلئے تین 4x4 گاڑیاں بھی فراہم کرینگے۔ اس موقع پر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈیرہ اسماعیل خان ڈاکٹر محمود بھٹنی نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایمرجنسی آپریشن سنٹر برائے فلڈ رسپانس کے قیام سے سیلاب متاثرین کو فوری رسپانس اور معاونت فراہم کرنے میں کافی مدد ملے گی جس کیلئے ڈبلیو ایچ او کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ حالیہ سیلاب کی وجہ سے محکمہ صحت کو بھی صحت سہولیات کی فراہمی میں چیلنجز کا سامنا ہے اور اس سلسلے میں ڈبلیو ایچ او کو جو ڈیمانڈز اور ضروریات سے متعلق آگاہ کیا گیا ان سب کو تسلیم کیا گیا ہے اور جو ہیلتھ سنٹر مکمل یا جزوی طور پر تباہ ہوئے ہیں ان مقامات پر عارضی طور پر متبادل رینٹڈ عمارت فراہم کی جائیگی جبکہ رینوویشن اور سولارائزیشن میں بھی معاونت کی جا ئیگی۔اسی طرح مختلف بیماریوں بالخصوص سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں وبائی امراض سے بہتر طور پر نمٹنے کیلئے ادویات کا سٹاک بھی فراہم کیا گیا ہے۔قبل ازیں عالمی ادارہ صحت کی جانب سے پاکستان کیلئے نمائندہ ڈاکٹر پالیتھا ماہی پالا نے عالمی ادارہ صحت ٹیم کے ہمراہ سیلاب سے متاثرہ اضلاع ڈیرہ اسماعیل خان اور ٹانک کا دورہ کیا اور سیلاب سے متاثرہ علاقے ہتھالہ سمیت دیگر علاقوں میں قائم مراکز صحت کا جائزہ لیا۔انہوں نے متاثرہ علاقوں کے مراکز صحت میں ادویات کی بڑی کھیپ اور آگاہی اشاعتی سامان بھی حکام کے حوالے کیا۔ 

مزید :

صفحہ اول -