سوئس ٹینس سٹار راجر فیڈرر نے کھیل کو خیر باد کہہ دیا ، الوداعی میچ میں امریکی جوڑی کے ہاتھو ں شکست

سوئس ٹینس سٹار راجر فیڈرر نے کھیل کو خیر باد کہہ دیا ، الوداعی میچ میں امریکی ...
سوئس ٹینس سٹار راجر فیڈرر نے کھیل کو خیر باد کہہ دیا ، الوداعی میچ میں امریکی جوڑی کے ہاتھو ں شکست

  

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) راجر فیڈرر نے ٹینس کی دنیا کو خیر آباد کہہ دیا  ہے ، کیریئر کے آخری میچ میں راجر اور نڈال کی جوڑی کو امریکی حریف جوڑی نے شکست دے دی، سوئس لیجنڈ فیڈرر نے 20 گرینڈ سلیم ٹائٹل اپنے نام کیے۔ 

سوئس ٹینس سٹار فیڈرر کی کامیابی کا پہلا بڑا لمحہ 2001 میں ومبلڈن تھا جب 19 سالہ نوجوان کی حیثیت سے انہوں نے چوتھے راؤنڈ میں گراس کورٹ کے بادشاہ پیٹ سمپراس کو شکست دی، سال 2004 سے 2007 تک فیڈرر نے 11 بڑے اعزازات جیتے جبکہ سال میں اوسطاً صرف 6 میچ ہارے۔

فرینچ اوپن کے فائنل میں رافیل نڈال سے شکست کے بعد وہ دوسری بار گرینڈ سلام کیلنڈر نہ جیت سکے، جو مردوں کے ٹینس میں صرف راڈ لیور اور ڈان بج جیت چکے تھے، اور یقیناً رافیل نڈال کے ساتھ ان کی مخالفت راجر فیڈرر کے کیریئر کی وضاحت کرتی ہے،رافیل نڈال نے نوواک جوکووچ کا بہت بار سامنا کیا لیکن سربیا کے اس کھلاڑی کو یہ کبھی نہیں بھولنے دیا گیا کہ وہ سوئس اور دھواں دھار ہسپانوی کھلاڑیوں کے دور میں ہیں,راجر فیڈرر اور رافیل نڈال کے ایک دوسرے کے خلاف کھیلے گئے سنسنی خیز میچوں میں 2008 میں ومبلڈن میں نڈال کی جیتی ہوئی پانچ سیٹوں کی میراتھن سے بہتر کوئی نہیں، یہ اس جوڑی کے درمیان مکمل اور بھرپور مقابلہ تھا جس نے عوام کے تخیل کو اپنی گرفت میں لیے رکھا۔

مزید :

کھیل -