رانی پور قتل کیس، مقتولہ فاطمہ کی ماں کو دھمکیاں دینا ایس ایچ او کو مہنگا پڑگیا

رانی پور قتل کیس، مقتولہ فاطمہ کی ماں کو دھمکیاں دینا ایس ایچ او کو مہنگا ...
رانی پور قتل کیس، مقتولہ فاطمہ کی ماں کو دھمکیاں دینا ایس ایچ او کو مہنگا پڑگیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

خیر پور (ویب ڈیسک) رانی پور میں کمسن ملازمہ کی ہلاکت کیس میں مقتولہ فاطمہ کے ورثا کے تحفظات پر تھانہ خان واہن کے سٹیشن ہاؤس آفیسر (ایس ایچ او) عبد الغنی دایو  کو معطل کرکے انکوائری شروع کردی گئی۔

جیو نیوز کے مطابق ایس ایس پی نوشہروفیروز عابد بلوچ کے مطابق مقتولہ فاطمہ کے ورثا کے تحفظات پر خان واہن ایس ایچ او کو معطل کردیاگیا۔انہوں نے کہا کہ فاطمہ کے والدین نے جو الزامات عائد کیے ہیں کہ ایس ایچ او خان واہن نے انہیں اور کیس کے گواہاں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دی ہیں، اس حوالے سے انکوائری کے احکامات دیے ہیں۔

دوسری جانب مقدمے میں گرفتار ملزم فیاض شاہ اورملزم منصور بٹ کو انسداد دہشت گردی کی عدالت خیرپور نے چارروزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔واضح رہے کہ دو روز قبل نگران وزیر داخلہ سندھ بریگیڈئیر(ر) حارث نواز اور آئی جی سندھ رفعت مختار نے مقتولہ فاطمہ کے گاؤں پہنچ کر تعزیت کی تھی تو فاطمہ کے والدین نے ایس ایچ او خان واہن پر الزامات عائد کیے تھے۔

مقتولہ کے والدین نے بتایاکہ ایس ایچ او انہیں اور کیس کے گواہان کو سنگین نتائج بھگتنے کی دھمکیاں دیں۔