30اہلسنّت جماعتوں کاوزیراعظم نواز شریف کے استعفے کا مطالبہ

30اہلسنّت جماعتوں کاوزیراعظم نواز شریف کے استعفے کا مطالبہ

لاہور(نمائندہ خصوصی)سنی اتحاد کونسل کے زیر اہتمام جامعہ رضویہ میں منعقدہ اہلسنّت جماعتوں کے مشترکہ اجلاس میں 30اہلسنّت جماعتوں نے نواز شریف کے استعفیٰ کا مطالبہ کردیا ۔ نواز شریف کی اقتدا ر میں موجودگی سے پانامہ لیکس کی شفاف تحقیقات ممکن نہیں۔ مشترکہ اجلاس کے اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ ن لیگ کسی دوسرے شخص کو وزیر اعظم نامزد کرے۔ اہلسنّت جماعتیں ’’کرپشن مکاؤ ملک بچاؤ مہم‘‘اور احتساب کی حمایت میں تحریک چلائیں گے۔کرپشن کے خلاف اور احتساب کے حق میں مفتیان کرام اجتماعی فتویٰ جاری کریں گے۔بلا امتیاز احتساب کا عمل تیز کیا جائے۔بھارت کے بارے میں نرم گوشہ رکھنے والے حکمران سیکورٹی رسک بن چکے ہیں۔ سزا یافتہ گستاخان رسول کو پھانسیاں نہ دینا حکومتی نااہلی اور اسلام دشمنی ہے۔پاکستان میں سیکولر ازم ناقابل برداشت اور غیر اسلامی قانون سازی ناقابل قبول ہے۔ اہلسنّت جماعتوں کا مشترکہ اجلاس سنی اتحاد کونسل کی دعوت پر جامعہ رضویہ مظہر الاسلام میں منعقد ہوا۔ مشترکہ اجلاس میں مرکزی جے یو پی، جماعت اہلسنّت پاکستان، نظام مصطفی پارٹی،انجمن طلباء اسلام، پاکستان فلاح پارٹی، تحریک مشائخ پاکستان، تنظیم المساجد پاکستان، مصطفائی تحریک، انجمن نوجوانان اسلام، سنی علماء بورڈ، جانثاران ختم نبوت ، تحفظ ناموس رسالت محا ذ، تنظیم اتحاد امت، تحریک فروغ اسلام، سنی یوتھ ونگ، تحریک عوام اہلسنّت، انجمن خدام اولیاء، تحریک محبت رسول، سنی جانثار ، تحریک نفاذ فقہ حنفیہ، بزم محدث اعظم پاکستان، تنظیم السعیداور دوسری اہلسنّت جماعتوں کے رہنماؤں نے شرکت کی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کرپشن اور دہشتگردی کے خلاف مسلسل خطبات جمعہ دیئے جائیں گے اور احتساب کے حق میں اور کرپشن کے خلاف احتجاجی مظاہرے بھی کئے جائیں گے ۔ اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں کو گرینڈ الائنس بنانے کیلئے خطوط لکھے جائیں گے اور اپوزیشن رہنماؤں سے ملاقاتیں کی جائیں گے۔اہلسنّت آئندہ کسی الیکشن میں مسلم لیگ ن کو ووٹ نہیں دیں گے۔اجلاس سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ محمد حامد رضا نے کہا کہ اب نمائشی نہیں اصلی احتساب ہو نا چاہیئے۔جنہیں جیلوں میں ہونا چاہیئے تھا وہ اقتدار میں بیٹھے ہوئے ہیں۔ حقیقی احتساب ہوا تو کئی برج الٹ جائیں گے۔ جنرل راحیل شریف کا کرپشن کے ناسور کو جڑ سے ختم کرنے کیلئے عزم خوش آئند ہے۔اجلاس سے مفتی محمد حسیب قادری، امانت علی زیب، مفتی مشتاق احمد نوری، پیر میاں غلام مصطفی، پیر طارق ولی چشتی اوردیگرنے بھی خطاب کیا۔

مزید : صفحہ آخر