پاک ایران گیس پائپ لائن معاہدہ میں ترمیم کا فیصلہ

پاک ایران گیس پائپ لائن معاہدہ میں ترمیم کا فیصلہ
پاک ایران گیس پائپ لائن معاہدہ میں ترمیم کا فیصلہ

  

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان اور ایران نے گیس پائپ لائن منصوبہ میں گیس کی خریدوفروخت کے معاہدے میں ترمیم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سلسلے میں اگلے ماہ اہم اجلاس طلب کر لیا گیا ہے۔ اجلاس کا ایجنڈا تیار کر لیا گیا جس کے تحت گیس پائپ لائن منصوبے پر عملدرآمد کیلئے ایک قابل عمل شیڈول کی تیاری شامل ہے۔ اخبار روزنامہ ایکسپریس کے مطابق پاک ایران منصوبے پر عملددرآمد کی کوشش جاری ہے۔ ایران پر عالمی پابندیاں ہٹنے کے بعد دونوں ممالک اس منصوبے پر بات چیت کی بحالی پر رضا مند ہو ئے ہیں، ان کوششوں کے تسلسل میں ایران نے اگلے ماہ مئی میں پاکستان کو دورے کی دعوت دی ہے۔ اس دورے کے مجوزہ ایجنڈا میں منصوبے پر عملدرآمد کیلئے ایک قابل عمل شیڈول کی تیاری شامل ہے جو گیس کی خریدوفروخت کے معاہدہ میں ترمیم کر کے تیار کیا جائے گا ۔ معاہدے کے مطابق ایران سے 750 ایم ایم ڈی ایف گیس حاصل کی جانا تھی۔ وزارت پٹرولیم کے حکام کے مطابق پاک ایران گیس پائپ میں بھارت اب شامل نہیں رہا، اس لئے پائپ لائن کا سائز چھوٹا کر دیا ہے۔

مزید : اسلام آباد