لیہ میں زہریلی مٹھائی کھانے والے مزید تین بچے اور ایک شخص دم توڑ گئے ،جا ں بحق افراد کی تعداد 27ہو گئی

لیہ میں زہریلی مٹھائی کھانے والے مزید تین بچے اور ایک شخص دم توڑ گئے ،جا ں بحق ...
لیہ میں زہریلی مٹھائی کھانے والے مزید تین بچے اور ایک شخص دم توڑ گئے ،جا ں بحق افراد کی تعداد 27ہو گئی

  

لیہ(مانیٹرنگ ڈیسک)لیہ میں زہریلی مٹھائی کھانے سے مزید دو بچے دم توڑ گئے جس کے بعد جاں بحق ہونے والے تعداد کی تعداد 27ہو گئی ہے ۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق زہریلی مٹھائی کھانے سے 3 سالہ بلا ل اور 4سالہ عشرت جاں بحق ہو گئے

تفصیل کے مطابق چند روز قبل لیہ کے علاقے کروڑ لعل عیسن میں شاہد نامی شخص نے بچے کی پیدائش پر اپنے عزیزوں کو دعوت پر مدعو کیا تھا، اس موقع پر شاہد کی جانب سے کھلائی گئی مٹھائی سے 48 افراد کی حالت خراب ہوگئی تھی، انہیں لیہ، ملتان اور فیصل آباد کے مختلف ہسپتالوں میں لےجایا گیا تھا، ڈاکٹروں کی جانب سے بھرپور کوششوں کے باوجود اب تک27 افراد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔آج جاں بحق ہونے والوںمیں 5 سالہ عبداللہ،3سالہ بلال ،4سالہ عشرت اور 35 سالہ غلام غازی شامل ہیں۔

محکمہ صحت کی جانب سے مٹھائی کے تجزیے کے بعد تصدیق کی گئی ہے کہ مٹھائی میں سیلفو لائل نامی زہر ملایا گیا تھا جو کہ زرعی زمینیوں پر خود رو جڑی بوٹیوں کو تلف کرنے کےلیے استعمال کیا جاتا ہے۔ پولیس نے مٹھائی کی دکان کے مالک طارق محمود، اس کے بھائی اور ملازم کو گرفتار کر لیا ہے تاہم پولیس اب تک مٹھائی میں زہر ملانے والے تک نہیں پہنچ پائی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لواحقین کے بیانات کے مطابق تفتیش کا سلسلہ جاری ہے لیکن انہوں نے کسی پرکوئی شک ظاہر نہیں کیا گیا اس لیے گرفتاری میں احتیایط سے کام لیا جارہا ہے۔

مزید : لیّہ