نوجوان کو گاڑی تلے روندنے والے امریکی سفارتکار کو سز ا دی جائے،آفتاب لودھی

نوجوان کو گاڑی تلے روندنے والے امریکی سفارتکار کو سز ا دی جائے،آفتاب لودھی

  



لاہور (پ ر) چیئرمین پاکستان عوامی تحریکِ انقلا ب پروفیسر آفتاب لودھی نے کہا کہ سپر پاور کا ڈپلومیٹک آفیسر ہونے کا مطلب یہ نہیں ہے کہ وہ کسی کی بھی جان لے سکتا ہے۔گزشتہ روز صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ڈپلومیٹک کمیونٹی کوہر گز یہ اجازت نہیں کہ وہ ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کسی معصوم انسان کو روند ڈالے۔انہوں نے کہا کہ امریکی ریاستوں فلوریڈا،ٹیکساس اور کیلیفورنیا میں وہیکولر ہومیسائڈ قانون کے تحت مجرم کو 1سے15 سال تک قیداورجرمانہ ایک ہزار ڈالر سے 1 ملین ڈالر تک ہو سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ریمنڈ ڈیوس کو سزا مل جاتی تو آج ایک اور پاکستانی عتیق بیگ کا قتل نہ ہوتا۔انہوں نے سوال کیاکہ کیا کوئی پاکستانی سفارتکار امریکہ میں اس جرم کے بعد قانونی کارروائی سے بچ سکتا ہے؟انہوں نے کہا کہ وڈیو کلپ سے ایسا معلوم ہوتا ہے کہ یہ قتل غلطی سے نہیں بلکہ جان بوجھ کر کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ اپنا اٹارنی جنرل پاکستان بھیجے اور قانونی کارروائی میں اپنا موقف پیش کرے۔پروفیسر آفتاب لودھی نے کرنل جوزف کو بلیک لسٹ کرنے کا خیر مقدم کیا ہے اور کہا کہ سفارتی استثنیٰ مذاق نہیں،اسکو پاکستانی قانون کے تحت نہیں تو امریکی قوانین کے تحت سزا دی جائے۔

آفتاب لودھی

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...