توانائی اور گیس بحرا ن نے معیشت کی جڑ یں کھو کھلی کر دیں، عاصم رضا

توانائی اور گیس بحرا ن نے معیشت کی جڑ یں کھو کھلی کر دیں، عاصم رضا

  



لاہور ( کامرس رپورٹر)پاکستان فلو ر ملز ایسو سی ایشن نے مطالبہ کیا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت اپنے اقتدار کے آخری سال میں فلو ر ملز مالکان کے گندم ایکسپورٹ کی مد میں ریفنڈ کی ادائیگی کو یقینی بنائے جبکہ بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس لگانے یاالفاظ کا ہیر پھیر کرنے کی بجائے بجٹ پالیسی کو آنے والی حکومت کے لیے چھوڑ دیا جائے ۔دوسری جانب توانائی کا بحران انڈسٹری اور ملکی تجارت کو دیمک کی طرح کھارہا ہے جس کے لیے لانگ ٹرم اور ٹھوس حکمت عملی کی ضرورت ہے ۔ان خیا لا ت کا اظہار پاکستان فلور ملز ایسو سی ایشن کے گروپ لیڈر اور سابق مرکزی چیئر مین عاصم رضا نے گز شتہ روز بجٹ تجاویز2018-19میں کیا ۔انھوں نے کہامہنگائی نے جہاں عام آدمی کی زندگی کرب میں مبتلا کر رکھی ہے وہیں توانائی اور گیس بحرا ن نے معیشت کی جڑ یں کھو کھلی کر دی ہیں ۔ جس سے سب سے زیادہ نقصان چھو ٹے کارخانہ داروں کو پہنچ رہا ہے انھو ں نے کہا کہ مہنگائی کا قلع قمع کر نے کے لیے بجلی بحران پر قابو پاتے ہو ئے پٹرولیم مصنو عات کی قیمتو ں کو مستحکم رکھا جائے ۔انھو ں نے کہا کہ حکو متی ریو نیو میں اضافہ کے لیے ٹیکس نادہندگان کو ٹیکس نیٹ میں لائے اور ٹیکس دہندگان کو ٹیکسوں میں ریلیف دیا جائے۔ انھو ں نے کہا کہ ناقص معاشی پالیسیوں اور امن و امان کی غیر یقینی صورتحال کی بدولت ملک میں سر مایہ کاری نہ ہو نے کے برابر رہ گئی ہے ۔عاصم رضا نے کہا کہ فلو ر ملز انڈسٹری شدید بحران سے دوچار ہے کروڑوں روپے کے ریفنڈ ادا نہیں ہو رہے جس سے فلو ر ملز مالکان مالی طور پر پر یشان ہیں کیو نکہ رواں سال کی گندم بھی مارکیٹ میں آگئی ہے جس کی ادائیگی بھی کر نی ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ فلو رملز انڈسٹری کو گندم ایکسپورٹ ریفنڈ ادا کیے جائیں جبکہ آئندہ مالی سال کے بجٹ میں تبدیلی نہ کی جائے اور اس کا سارا اختیار آنے والی حکومت کو دیا جائے تاکہ وہ بہتر طریقہ سے بجٹ پالیسی بنا سکے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...