جو گوادر کی مخالفت کریگا وہ بلوچی ہے نہ پاکستانی ، سی پیک کی اہمیت کو سمجھنا ہو گا : گوادر کانفرنس

جو گوادر کی مخالفت کریگا وہ بلوچی ہے نہ پاکستانی ، سی پیک کی اہمیت کو سمجھنا ...

  



لاہور(جنرل رپورٹر، نمائندہ خصوصی ،ایجوکیشن رپورٹر،کامرس رپورٹر) بلوچستان کے سینیٹر بابر کودا نے کہا ہے کہ جو بلوچی گوادر کی مخالفت کرے گا وہ بلوچی ہے نہ پاکستانی، گوادر کے لوگوں کی حالت کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے اس پر خاص توجہ دی جائے پھر ہی اس کے ثمرات سامنے آئیں گے ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے روز نامہ پاکستان کے زیر اہتمام فلیٹیز ہوٹل میں منعقدہ گوادر کانفرنس کی اختتامی تقریب سے خطاب اوربعد ازاں شرکاء کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کیا۔کانفرس سے روز نامہ پاکستان کے چیف ایڈ یٹر مجیب الرحمن شامی‘ پاکستان نیشنل ریفارمز موومنٹ پاکستان کے چیئرمین بریگیڈر(ر) نادرمیر‘ احمد کمال بلوچ‘ طارق منیراور طاہر ریاض سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ اس موقع پر روز نامہ پاکستان کے ایڈیٹر عمر مجیب شامی‘ روز نامہ سٹی فورٹی ٹو کے ایڈیٹر نوید چودھری،آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی صدر خالد پرویز بھی موجود تھے۔سینیٹر بابر کودا نے کہا کہ گوادر کے بارے میں تو سب باتیں کرتے ہیں لیکن گوادر کے لوگ کن حالات میں زندگی بسر کررہے ہیں ان کے بارے میں کوئی بات نہیں کرتا لیکن مین آج گودار کا رہائشی ہونے کے ناطے آپ لوگوں کو یہ بتانا چاہتا ہوں کہ وہاں کے لوگوں کو پینے کا صاف پانی چاہئے تعلیم و صحت چاہئے اس کی طرف کسی بھی حکومت نے کوئی توجہ ہی نہیں دی ہے لیکن جب سے بزنجو صاحب کی حکومت آئی ہے تو انہوں نے ان مسائل کو حل کرنے کی طرف خصوصی توجہ رکھی ہوئی ہے پینے کے پانی کا مسئلہ حل ہونے جارہا ہے اور سولر کے ذریعے سے بجلی کا مسئلہ بھی حل ہونے جارہا ہے بجلی ہو گی تو انڈسٹری لگے گی اس انفراسٹرکچر کی طرف سب سے پہلے توجہ دینے کی ضرورت تھی چلو اب ہی بزنجو صاحب نے یہ مسائل حل کرنے شروع کردئیے ہیں لیکن اس سے پہلے والی حکومتیں اگر انفراسٹرکچر کی طرف توجہ دیتی تو آج مجھے آپ لوگوں کے سامنے یہ شکوے نہ کرنے پڑتے کیونکہ یہ فورم شکوے کرنے کا فورم نہیں ہے میرے شکوے شکایت اپنی جگہ پر لیکن میں اس بات کی گارنٹی کرتا ہوں کہ میں رہوں نہ رہوں لیکن گوادر اور سی پیک ترقی کرے گا اور اس ے پاکستان ترقی کرے گا۔انہوں نے کہا کہ ہم لوگوں کو پتہ ہی نہیں ہے کہ گوادر اور سی پیک کتنا بڑا منصوبہ ہے اس منصوبے کی بنیاد رکھنے سے اگر شی چن پنگ ساری زندگی کیلئے چین کا صدر بن سکتا ہے تو ہم لوگوں کو بھی اس منصوبے کی اہمیت کو سمجھنا ہو گا ہم تو کہتے ہیں کہ چین آیا ہی پاکستان کی ترقی کیلئے ہے اس کے آنے سے ہی پاکستان کی ترقی ہو رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ احسن اقبال اس منصوبے کے حوالے سے میڈیا کے ذریعے سے ہی ہمیں بتا دیں کہ اس حوالے سے ان کی پالیسی کیا ہے وہ اپنی پالیسی کو واضح کریں ابھی تک حکومت نے اس حوالے سے اپنی کوئی بھی پالیسی واضح نہیں کی ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ وہ اس پر واضح اور ٹھوس پالیسی کا اعلان کریں ۔روز نامہ پاکستان کے چیف ایڈیٹر مجیب الرحمن شامی نے کہا کہ گوادر اور سی پیک پاکستان کی تعمیرو ترقی کا ستارہ بن چکا ہے مستقل کا پاکستان سی پیک اور گوادر کے ساتھ جڑا ہوا ہے ہمیں امید ہے کہ جیسے جیسے یہ منصوبہ آگے بڑھے گا ویسے ہی پاکستان آگے بڑھتا چلا جائے گا اور اس کی وجہ سے پاکستان کی رگوں میں بھی خون بڑھتا چلا جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ نادر میر نے بڑی تفصیل کیساتھ اس منصوبے کے حوالے سے روشنی ڈالی ہے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...