بی آر ٹی منصوبہ کی راہ میں بجلی کھمبے نہ ہٹانے پر چیف عدالت طلب

بی آر ٹی منصوبہ کی راہ میں بجلی کھمبے نہ ہٹانے پر چیف عدالت طلب

  



پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس اعجازانورپرمشتمل دورکنی بنچ نے بس ریپڈٹرانزٹ منصوبے کی راہ میں آنے والے بجلی کھمبوں کو نہ ہٹانے پر پیسکوچیف کوعدالت طلب کرلیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے بس ریپڈٹرانزٹ منصوبے کے حوالے سے کارروائی شروع کی تو اس موقع پر ڈائریکٹرجنرل پی ڈی اے اسرارالحق ٗ ایس ایس پی ٹریفک یاسرآفریدی اورڈائریکٹرجنرل ادارہ تحفظ ماحولیات ڈاکٹربشیرعدالت میں پیش ہوئے اس موقع پرعدالت کوبتایا گیاکہ اس موقع پر ایس ایس پی ٹریفک یاسر آفریدی نے عدالت کو بتایا کہ سوئی ناردرن گیس نے ہشتنگری میں گیس سپلائی لائن کے لئے کھدائی کی تھی جس میں پائپ لائن کی تنصیب کے بعدکھودی جانے والی جگہ پرریت بھردی گئی ہے جبکہ یہ کنکریٹ سے بھرنی چاہئیے تھی تاکہ وہاں سے گذرنے والی گاڑیوں کو نقصان نہ پہنچے اوربارش کے بعد مذکورہ مقام دھنس گیاہے جہاں آنے جانے والوں کو شدید مشکلات کاسامناکرناپڑرہا ہے جس پرفاضل بنچ نے جی ایم گیس کو کل جمعرات کے روز عدالت طلب کرلیااسی طرح عدالت کو بتایاگیاکہ پیسکوکی جانب سے بھی منصوبے میں مشکلات حائل ہیں کیونکہ کھمبے اوربجلی کی تاریں بی آرٹی کے منصوبے میں رکاؤٹ بنی ہوئی ہیں اورمتعدد مرتبہ انہیں اس حوالے سے آگاہ کیاگیاہے تاہم انہیں ہٹایانہیں جارہا ہے جس کے باعث منصوبے پرکام تاخیرکاباعث بن رہا ہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے پیسکوکوبھی جمعرات کے روز عدالت طلب کرلیااس موقع پرڈی جی ادارہ تحفظ ماحولیات ڈاکٹربشیراحمدبھی پیش ہوئے جنہوں نے عدالت میں اپنی رپورٹ پیش کی جبکہ ڈی جی پی ڈی اے اسرارالحق نے عدالت کو بتایا کہ بحیثیت ڈی جی انہیں ہٹایاجارہا ہے کیونکہ ان کی مدت مکمل ہوچکی ہے جس پرفاضل بنچ نے کہاکہ وہ بی آرٹی منصوبے کے پراجیکٹ ڈائریکٹرہیں اوربی آرٹی منصوبے کی تکمیل تک وہ پراجیکٹ ڈائریکٹربرقراررہیں گے کیونکہ اس منصوبے کو آپ ہی بروقت پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے

مزید : پشاورصفحہ آخر