سوئی نادرن گیس کو نانبائیوں سے ایڈیشنل سیکورٹی وصولی روک دی گئی

سوئی نادرن گیس کو نانبائیوں سے ایڈیشنل سیکورٹی وصولی روک دی گئی

  



پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس قلندرعلی خان اور جسٹس اشتیاق ابراہیم پرمشتمل دورکنی بنچ کو محکمہ سوئی ناردرن گیس کو صوبہ بھرکے نانبائیوں سے ایڈیشنل سیکیورٹی وصول کرنے سے روک دیاہے اورمحکمہ گیس سے جواب مانگ لیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز خیبرپختونخواکے نانبائی ایسوسی ایشن کے صدر حاجی اقبال کی جانب سے شیبرخان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائررٹ پرجاری کئے اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ خیبرپختونخواگیس کی پیداوارمیں خودکفیل صوبہ ہے اوریہاں سے نکلنے والی اضافی گیس ملک کے تین دیگرصوبوں کو بھی سپلائی کی جاتی ہے اس کے باوجود محکمہ گیس آرایل این جی غیرملکی مائع گیس درآمد کرکے صوبے کے نانبائیوں پرمہنگے داموں فروخت کی جارہی ہے اوراس مقصد کے لئے صوبہ بھر کے نانبائیوں سے اضافی سکیورٹی بھی طلب کی جارہی ہے جس کے لئے ایک نوٹی فکیشن جاری کرکے صوبہ بھرکے نانبائیوں کو اضافی سکیورٹی داخل کرنے کے لئے نوٹس بھجوائے گئے ہیں تاہم اس اقدام سے دس روپے کی روٹی کی قیمت میں سات تادس روپے کااضافہ ہوگا اوراس طرح روٹی کی قیمت بیس روپوں تک ہوجائے گی اوراس طرح یہ سارااضافی بوجھ غریب عوام پرپڑے گا لہذاسوئی ناردرن گیس کے نوٹس کالعدم قرار دئیے جائیں فاضل بنچ نے ابتدائی دلائل کے بعد حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے گیس حکام سے جواب مانگ لیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...