پنجاب حکومت کا تعلیمی اداروں کے دیے 3.2ارب روپے کے فنڈز کا آڈٹ کرانیکا فیصلہ

پنجاب حکومت کا تعلیمی اداروں کے دیے 3.2ارب روپے کے فنڈز کا آڈٹ کرانیکا فیصلہ

  



راولپنڈی ( سید گلزار ساقی سے) پنجاب حکومت نے راولپنڈی سمیت صوبہ کے36اضلاع کے تعلیمی اداروں کودیے گئے 3ارب50کروڑ روپے فنڈزکاآڈٹ کرانے کا فیصلہ کر لیا ،فنڈز میں بے قاعدگیوں اور جعلی رسیدوں کی تحقیقات کیلئے سپیشل برانچ ، اینٹی کریشن اورمانیٹرنگ ٹیموں کو ٹاسک،فنڈز استعمال میں نہ لانے پر ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کے افسران اور سکولز ہیڈز کے خلاف کارروائی کی جائیگی، تحقیقاتی ٹیموں کی رپورٹ کے بعد ذمہ داروں کے خلاف ایکشن ہو گا،ذرائع کے مطابق، سکول ایجوکیشن ڈیپارنمنٹ پنجاب نے راولپنڈی ضلع سمیت صوبہ بھر کے36 اضلاع کی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹیز کوتین مرحلوں میں 3 ارب 50کروڑ کے فنڈز ریلزکیے گئے جن میں سے راولپنڈی ضلع کے1927پرائمری ، مڈل ، ہائی ا ورہائیرسکینڈری سکولوں کو نان سیلری بجٹ کی مدمیں 33کروڑ37لاکھ 65 ہزارروپے جاری ہوئے، ہر ہائی اور ہائر سیکنڈری سکول کو ایک لاکھ 80 ہزار روپے کا این ایس بی دیا جائے گا،یوٹیلیٹی بلز کی مد میں 25 ہزار اور پارٹ ٹائم کوچز کیلئے 20 ہزار روپے دیئے گئے ہیں، ان فنڈز سے راولپنڈی ضلع کے سکولوں کی تعمیر ومرمت ، رنگ وروغن ، تزائین وآرائش ، یوٹیلٹی بلوں کی ادائیگی اوردیگر مد میں خرچ کیے جانے تھے ، ان فنڈز کے استعمال کرنے کے حوالے سے صوبائی حکومت نے آڈٹ کرانے کا فیصلہ کیاہے ، فنڈز میں بے قاعدگیوں اور بوگس رسیدیں جمع کرانے کی بھی شکایات ہیں ،فنڈز کی چھان بین سپیشل برانچ ، اینٹی کریشن اور مانیٹرنگ ٹیموں کو ٹاسک دیا جارہاہے ، جس کی رپورٹ پر ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کے افسران اورسکولز ہیڈز کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی،جون 2017سے اپریل 2018کے دیئے جانے والے فنڈز کا آڈٹ کیا جائے گا اس حوالے سے ضلع بھر کے سکولوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنا ریکارڈ فوری طورپر مکمل کرلیں ،تاکہ آڈٹ کے دروان کوئی مشکل درپیش نہ ہو۔

Back to Conversion Tool

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر