دوبارہ جوہری پروگرام شروع کیا تو ایران کیلیے بڑا مسئلہ کھڑا ہو جائے گا، ڈونلڈ ٹرمپ

دوبارہ جوہری پروگرام شروع کیا تو ایران کیلیے بڑا مسئلہ کھڑا ہو جائے گا، ...
دوبارہ جوہری پروگرام شروع کیا تو ایران کیلیے بڑا مسئلہ کھڑا ہو جائے گا، ڈونلڈ ٹرمپ

  



واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ایران دوبارہ جوہری پروگرام شروع نہیں کرسکے گا، اگر اس نے ایسا کیا تو بڑا مسئلہ کھڑا ہوجائے گا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ سے فرانسیسی صدرایمانوئل میکرون نے وائٹ ہاو¿س میں ملاقات کی جس میں ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کو متنبہ کرتے ہوئے کہا 2015 کے عالمی جوہری معاہدے کے برخلاف جوہری پروگرام شروع کیا تو ایران کے لیے بڑے مسائل پیدا ہوجائیں گے۔

امریکی صدر نے ایران کے ساتھ چھ عالمی طاقتوں کے کیے گئے جوہری معاہدے کو دیوانگی قرار دیا۔دوسری جانب فرانس کے صدرایمانوئل میکرون دورہ امریکہ میں ڈونلڈ ٹرمپ پرزور دے رہے ہیں کہ جوہری معاہدے کی پاسداری کریں اور اس کو ختم نہ کریں۔فرانسیسی صدر سے ملاقات کے بعد صحافیوں نے سوال کیا کہ کیا ایران جوہری معاہدے کے خاتمے کے بعد اپنا جوہری پروگرام دوبارہ شروع کردے گا جس پرامریکی صدر نے کہا کہ ایسا کرنا ایران کے لیے اتنا آسان نہیں ہوگا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ وہ جوہری پروگرام دوبارہ شروع نہیں کرسکیں گے، اگر انہوں نے دوبارہ شروع کیا تو ان کے لیے بڑے مسائل پیدا ہوجائیں گے۔ادھر فرانسیسی صدر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا وہ سمجھتے ہیں کہ ایران کے ساتھ ایک جوہری معاہدہ کیا جا سکتا ہے۔

ایمانوئل میکرون کا کہنا تھا کہ ہم استحکام چاہتے ہیں اور میں سمجھتا ہوں کہ ہم ایران کے ساتھ معاہدے کا راستہ نکال سکتے ہیں۔

یاد رہے کہ رواں سال 13 جنوری کو امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے ایران کا جوہری معاہدہ ختم کرنے کا فیصلہ موخر کرتے ہوئے کہا تھا کہ آخری بار ایرانی جوہری معاہدے کی توثیق کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دور حکومت میں فرانسیسی صدر پہلے سربراہ مملکت ہیں جو باضابطہ سرکاری دورے پرامریکہ کا دورہ کررہے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...