بیرونی امداد غریب طبقہ پر خرچ ہونی چاہیے،بیگم بیلم حسنین

بیرونی امداد غریب طبقہ پر خرچ ہونی چاہیے،بیگم بیلم حسنین

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) پیپلزپارٹی کی سابق رکن قومی اسمبلی بیگم بیلم حسنین نے کہا ہے کہ بیرونی ممالک سے آئی ہوئی رقم قوم پر واضح کی جائے کس ملک نے کتنے پیسے دیئے تاکہ عوام میں ایک بے چینی ختم ہو جائے اور ایمانداری کے ساتھ رقوم غریبوں اور سفید پوش طبقہ پر خرچ ہونی چاہیے۔

امداد کی رقم کتنی آئی ہے۔ وزیراعظم اس کا جواب دے اس میں کوئی برائی نہیں ہے۔ قوم کا اعتماد بحال ہوگا۔ گزشتہ روز ایک بیان میں بیگم بیلم حسنین نے کہا کہ مشکل وقت ہے، لاک ڈاؤن سے لوگوں کے گھروں میں بھوک آ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو راشن اور رقوم وفاق نے سندھ کو دی تھی وہ ایمانداری سے عوام کو دی گئی ہے جس کا پیپلزپارٹی حساب دینے کو تیار ہے۔ بیگم بیلم حسنین نے کہا کہ کفایت پروگرام میں بھی شفاف رقم تقسیم ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو اس وقت کوئی سیاسی اختلاف نہیں رکھتے وہ لوگوں کی جان بچانے کی بات کر رہے ہیں کہ کرونا سے جانی نقصان نہیں ہونا چاہیے مگر افسوس حکومتی وزراء کو اپنے بیانات پر کنٹرول نہیں ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -