وزیر اعظم مددکے بجائے عوام سے امداد مانگ رہے ہیں،الطاف شاہد

وزیر اعظم مددکے بجائے عوام سے امداد مانگ رہے ہیں،الطاف شاہد

  

لاہور(پ ر؛)پاک سر زمین پارٹی برطانیہ کے صدرچوہدری محمد الطاف شاہد نے کہا ہے کہ کشکول برداروزیراعظم ایٹمی پاکستان کے شایان شان نہیں۔وزیراعظم عمران خان اس ناز ک وقت میں عوام کی'' مدد''کرنے کی بجائے الٹا ان سے'' امداد''مانگ رہے ہیں۔وزیراعظم اپنا تین سوکنال کاقصربنی گالہ نیلام کرکے وہ رقم کرونافنڈ میں عطیہ کیوں نہیں کرتے،عمران خان کے کرداروافکار میں بدترین تضادپایاجاتا ہے۔حکمران ایک طرف عوام سے چندہ مانگ رہے ہیں جبکہ دوسری طرف اقتدار کے ایوانوں میں کرپشن کاسورج سوانیزے پرہے۔

کرونا نے معیشت کوزمین بوس کردیا مگرحکمرانوں کی عیش وعشر ت میں کوئی کمی نہیں آئی۔کروناوبا کے باوجود ریاست میں سیاست کاماحول گرم ہے۔حکمران طبقات اس نازک وقت میں بھی باہم دست وگریبان ہیں۔وفاق اورصوبوں کے اقدامات میں تضادات ہیں،وہ ایک پیج پرآنے کیلئے تیار نہیں۔حکومت اوراپوزیشن دونوں میں کوئی سنجیدہ نہیں،عوام کوجمہوری قوتوں کے درمیان جاری بلیم گیم میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ایٹمی پاکستان کاوزیراعظم ہروقت چندے مانگتاہوا اچھا نہیں لگتا۔ اپنے ایک بیان میں چوہدری محمدالطاف شاہد نے مزید کہا کہ تبدیلی سرکار کواپنا آمرانہ رویہ اوربیانیہ بدلناہوگا،حکمران جان بوجھ کرپاکستان کاوقار مجروح کررہے ہیں۔ پی ٹی آئی حکومت وضاحت کرے کیاایٹمی ریاست عطیات اور چندے پر چلے گی۔انہوں نے کہا کہ حکمران بیرونی قرض اورعطیات پرانحصار کرنے کی بجائے وسائل پیداکریں۔ بدقسمتی سے حکمرانوں کی سوچ عطیات تک محدود ہے،انہو ں نے بڑاسوچاہوتا توآج ریاست اس حالت میں نہ ہوتی۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کی نااہلی بے نقاب ہوگئی،اناڑی پاکستان کی باگ ڈور نہیں سنبھال سکتے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -