پشاور، رمضان المبارک میں سیکورٹی پلان تشکیل

پشاور، رمضان المبارک میں سیکورٹی پلان تشکیل

  

پشاور(کرائمز رپورٹر)کپیٹل سٹی پولیس پشاور نے رمضان المبارک کے لئے سکیورٹی پلان تشکیل دے دیا، سکیورٹی پلان کے مطابق شہر بھر کے حساس مقامات پر 5 بکتر بند گاڑیاں، 30 پولیس موبائل ٹیمیں جبکہ 30 سپیشل رائیڈرز سکواڈز ہمہ وقت گشت کریں گے، گزشتہ روز جاری ہونے والے پلان کے مطابق ڈویژنز ایس پیز کی نگرانی میں ایس ڈی پی اوز، ایس ایچ اوز سمیت 3 ہزار سے زائد پولیس اہلکار مساجد، غلہ مارکیٹ، اشیاء خوردونوش بازاروں اور دیگر حساس مقامات پر سکیورٹی کے فرائض انجام دیں گے، خصوصی ترتیب دیئے گئے پلان کے مطابق سحر و افطار کے اوقات میں 20 سپیشل موبائل سکواڈز اور سٹی پٹرولنگ کے موبائل اور رائیڈر سکواڈ بھی گشت کریں گے، نماز تراویح کیلئے 782 مساجد کی سکیورٹی الرٹ کرتے ہوئے 1564 پولیس افسران و اہلکار تعینات کرنے کے احکامات جاری کر دئیے گئے ہیں جبکہ شہر کے مختلف بازاروں میں سادہ کپڑوں میں پولیس اہلکاروں کو بھی تعینات کیا جائے گا، اسی طرح غلہ مارکیٹ اور دیگر خوردونوش کے بازاروں میں خریداروں اور تاجروں کی حفاظت کے پیش نظر پیدل گشت میں بھی اضافہ کر دیا گیا ہے، عوام کے جان و مال کی حفاظت کی خاطر بی ڈی یو اور سنیفر ڈاگز یونٹ کے اہلکار بھی تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، شہر کے مختلف بازاروں اور دیگر اہم مقامات پر سناپ چیکنگ کے ساتھ ساتھ شہر کے تمام داخلی و خارجی راستوں کی نگرانی بھی سخت کر دی گئی ہے سی سی پی او محمد علی گنڈا پورتفصیلات کے مطابق کپیٹل سٹی پولیس پشاور نے رمضان المبارک 2020 کے بابرکت مہینے میں امن وامان کو برقرار رکھنے اور کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کی خاطر خصوصی سکیورٹی پلان تشکیل دیدیا ہے جس کے مطابق شہر کے تمام داخلی و خارجی راستوں کی سکیورٹی بڑھانے سمیت مختلف مقامات پر سناپ چیکنگ شروع کر دی گئی ہے، اسی طرح شہریوں کی جان و مال کی حفاظت کو یقینی بنانے کی خاطر سنیفر ڈاگز اور بی ڈی یو کی خصوصی ٹیمیں بھی تعینات کر دی گئی ہیں، پلان کے مطابق 5 بکتر بند گاڑیاں، 30 پولیس موبائل ٹیمیں اور 30 رائیڈر سکواڈز بھی چوبیس گھنٹے موجود رہینگے، سکیورٹی پلان کے مطابق غلہ مارکیٹ اور دیگر اشیاء خوردونوش کے بازاروں سمیت حکومتی احکامات کی روشنی میں کھلنے والے دیگر ضروری بازاروں میں خریداروں اور تاجروں کی حفاظت کی سٹی پٹرولنگ فورس سمیت سادہ کپڑوں میں بھی پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے، جاری سکیورٹی پلان کے مطابق سٹی، کینٹ، رورل اور صدر ڈویژن کے 782 مساجد کی سکیورٹی ہائی الرٹ کرتے ہوئے ایس پیز اور ایس ڈی پی اوز کی نگرانی میں 1564 پولیس اہلکار تعینات کر دئیے گئے ہیں اس ضمن میں ایس ایس پی آپریشن ظہور بابر آفریدی نے کہا ہے کہ ماہ صیام کی خاطر تعینات تین ہزار سے زائد پولیس اہلکار شہر میں امن و امان برقرار رکھنے کی خاطر سکیورٹی کے فرائض سرانجام دیں گے، انہوں نے واضح کیا ہے کہ کرونا وائرس لاک ڈاؤن کی وجہ سے شہر کے مختلف علاقوں میں گاڑیوں کا داخلہ بند کر دیا گیا ہے جبکہ رمضان المبارک کے آخری عشرہ میں اندرون شہر گاڑیوں کے داخلہ میں مزید سختی کی جائے گی سی سی پی او محمد علی گنڈا پور نے رمضان المبارک میں شہریوں کے جان و مال کی حفاظت کو یقینی بنانے اور کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کی خاطر تمام پولیس افسران اوراہلکاروں کو سکیورٹی پلان پر من و عن عمل درآمد کو یقینی بنانے سمیت کرونا وائرس سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر پر بھی سختی سے عمل کرنے کی تاکید کی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -