”ملک میں کوئی کیس زیرالتوا نہیں رہا“ماڈل کورٹس کی ایک سالہ کارکردگی کی رپورٹ چیف جسٹس گلزار احمد کو پیش

”ملک میں کوئی کیس زیرالتوا نہیں رہا“ماڈل کورٹس کی ایک سالہ کارکردگی کی ...
”ملک میں کوئی کیس زیرالتوا نہیں رہا“ماڈل کورٹس کی ایک سالہ کارکردگی کی رپورٹ چیف جسٹس گلزار احمد کو پیش

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ملک بھر کی 442 ماڈل کورٹس کی ایک سالہ کارکردگی کی رپورٹ چیف جسٹس گلزار احمد کو پیش کردی گئی ، ڈی جی ماڈل کورٹس کاکہنا ہے کہ ملک میں کوئی کیس زیرالتواءنہیں رہا۔

نجی ٹی وی کے مطابق ملک بھر کی 442 ماڈل کورٹس کی ایک سالہ کارکردگی کی رپورٹ چیف جسٹس گلزار احمد کو پیش کردی گئی ،رپورٹ کے مطابق ماڈل کریمنل کورٹس نے 874 کو سزائے موت اور 2616 مجرمان کو عمر قید کی سزا سنائی، ماڈل کورٹس نے ایک لاکھ 45ہزار86مقدمات کے فیصلے سنائے،ماڈل کورٹس نے2لاکھ 48ہزار442گواہان کے بیانات قلمبند کئے،ملک کے بے شمار اضلاع میں تمام کیسز کے فیصلے کر دیئے گئے، ڈی جی ماڈل کورٹس کاکہنا ہے کہ ملک میں کوئی کیس زیرالتواءنہیں رہا۔چیف جسٹس گلزار احمد، جسٹس مشیر عالم اور جسٹس عمر عطا بندیال نے ماڈل کورٹس کی کارکردگی کی تعریف کی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -