23 سالہ لڑکی نے لاک ڈاﺅن کی وجہ سے خودکشی کرلی، آخری پیغام میں اس کی وجہ کیا بتائی؟ جان کر کوئی بھی پریشان ہوجائے

23 سالہ لڑکی نے لاک ڈاﺅن کی وجہ سے خودکشی کرلی، آخری پیغام میں اس کی وجہ کیا ...
23 سالہ لڑکی نے لاک ڈاﺅن کی وجہ سے خودکشی کرلی، آخری پیغام میں اس کی وجہ کیا بتائی؟ جان کر کوئی بھی پریشان ہوجائے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں لاک ڈاﺅن کی وجہ سے ایک اور لڑکی نے خودکشی کر لی۔ڈیلی سٹار کے مطابق اس 23سالہ لڑکی کا نام چیلسی ڈیک تھا جو خاندان سے الگ ایک اپارٹمنٹ میں اکیلی رہتی تھی۔ اس دوران لاک ڈاﺅن ہو گیا اور وہ اکیلی وہیں پھنس گئی۔ اس نے فیس بک پر اپنی آخری پوسٹ میں لکھا کہ ”ہر گزرتے دن کے ساتھ زندگی خوفناک تر ہوتی جا رہی ہے۔ میں خبریں نہیں دیکھتی کیونکہ اس سے مجھے احساس ہوتا ہے کہ حالات مزید بدتر ہونے جا رہے ہیں۔ میں اس وباءکے متعلق صرف آن لائن پڑھتی ہوں اور وہاں بھی ہر گزرتے دن کے ساتھ مزید خوفناک باتیں پڑھنے کو مل رہی ہیں۔“

چیلسی نے مزید لکھا کہ ”میں امید کرتی ہوں کہ میری فیملی اور دوست محفوظ ہوں گے۔ اگر ان میں سے کوئی مجھ سے بات کرنا چاہتا ہے تو میں ان سے صرف ایک میسج کے فاصلے پر ہوں۔“اس پوسٹ پر کمنٹس میں چیلسی کی والدہ ڈان ہوویل نے اسے ہدایت کی کہ اگر وہ خود کو تنہاءمحسوس کر رہی ہے تو ان کے ساتھ شفٹ ہو جائے۔ اس کے اگلے روز اس کے گھروالوں کا اس سے رابطہ نہیں ہو پایا جس پر انہوں نے پولیس کو اطلاع دی۔

پولیس اس کے اپارٹمنٹ پر پہنچی لیکن وہ وہاں موجود نہیں تھی، جس پر اس کی تلاش شروع کی گئی۔ بعد ازاں سی سی ٹی وی کی مدد سے پولیس کو علم ہوا کہ چیلسی نے دریا میں کود کر خودکشی کر لی ہے۔ ایک سی سی ٹی وی فوٹیج میں اسے گھاٹ کی طرف جاتے ہوئے دیکھا گیا تھا اور وہاں کنارے پر اس کا فون پڑا ہوا پولیس کو ملا۔چیلسی کے گھر والوں کا کہنا ہے کہ اس کی موت کی وجہ لاک ڈاﺅن ہے۔ اس کی وجہ سے اس کی ذہنی حالت ایسی ہو گئی کہ اس نے خودکشی کر لی۔ واضح رہے کہ چند روز قبل بھی برطانیہ میں ایک نوعمر لڑکی نے خودکشی کر لی تھی اوراس کے والدین نے بھی اس کی خودکشی کی وجہ لاک ڈاﺅن کو قرار دیا تھا۔

مزید :

برطانیہ -