ایجو کیشن اتھارٹی کا سرکاری سکولوں میں مانیٹرنگ کیلئے جدید کیمرے نصب کرنے کا فیصلہ 

  ایجو کیشن اتھارٹی کا سرکاری سکولوں میں مانیٹرنگ کیلئے جدید کیمرے نصب کرنے ...

  

  لاہور (لیڈی رپورٹر)سرکاری سکولوں میں کروڑوں روپے کی لاگت سے جدید کیمرے نصب کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا  اساتذہ اور بچوں کی سکیننگ کیساتھ آن لائن حاضری بھی لگائی جائیگی ایجوکیشن اتھارٹی کی جانب سے سرکاری سکولوں کی مانیٹرنگ کو مزید مؤثر بنانے کا فیصلہ کیا گیا سرکاری سکولوں میں کروڑوں روپے کی لاگت سے جدید کیمرے نصب کیے جائیں گے پہلے مرحلے میں پائلٹ پراجیکٹ کے طور پر شہر کے 2 سکولوں گورنمنٹ اے پی ایس بوائز اینڈ گرلز سکول ماڈل ٹاؤن میں کیمرے نصب ہونگے کیمروں کا کنٹرول پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے پاس ہوگا ایجوکیشن اتھارٹی لاہور کے مطابق سکولوں میں چوری کی واردات کی روک تھام کیلئے بھی جدید کیمروں سے مدد لی جائیگی کیمروں کے نصاب سے حاضری لگانے میں بھی اساتذہ کا وقت ضائع نہیں ہوگا ایجوکیشن اتھارٹی کا کہنا ہے کہ جدید کیمرے لگانے کا مقصد اساتذہ اور بچوں کو محفوظ ماحول فراہم کرنا ہے دوسری جانب پنجاب حکومت نے بچوں پر سکولوں میں تشدد روکنے کے حوالے سے قانون سازی کرنے کا فیصلہ کیا اس حوالے سے محکمہ قانون نے مسودہ قانون تیار کر لیا سکول میں بچے کو تھپڑ مارنے پر پی پی سی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج ہوگا ٹیچر سکولوں میں طلبا ء کو نفسیاتی سزا بھی نہیں دے سکیں گے کسی بھی قسم کی سزا پر ٹیچر کیخلاف پیڈا ایکٹ کے تحت کارروائی ہوگی بچوں کو سزا دینے پر ٹیچر کو برطرف بھی کیا جا سکے گا، مسودہ قانون جلد منظوری کیلئے کابینہ کمیٹی میں پیش کیا جائے گا۔

کیمرے نصب 

مزید :

صفحہ آخر -