صاف پانی کمپنی ریفرنس، رابعہ عمران سمیت ملزمان کے اثاثوں کا ریکارڈ طلب

صاف پانی کمپنی ریفرنس، رابعہ عمران سمیت ملزمان کے اثاثوں کا ریکارڈ طلب

  

لاہور(نامہ نگار) احتساب عدالت کے ڈیوٹی جج شیخ سجاد احمدنے صاف پانی کمپنی ریفرنس میں میاں شہباز شریف کی صاحبزادی رابعہ عمران سمیت دیگر افرادکے اثاثوں کا ریکارڈ طلب کر تے ہوئے سماعت 21 مئی تک ملتوی کردی،عدالت نے نیب تفتیشی کو آئندہ سماعت پر ملزمان کی جائیدادوں کا ریکارڈ بھی پیش کرنے کا حکم دیا گزشتہ روزصاف پانی کمپنی ریفرنس میں عدالت میں شہباز شریف کی بیٹی اور داماد کی جائیدادوں کا ریکارڈ پیش نہیں کیا جا سکا یادرہے کہ عدالتی حکم پر عدالت میں پیش نہ ہونے پر دونوں ملزمان کی اشتہاری کی کارروائی کا آغاز کیا جا چکا ہے  صاف پانی کرپشن ریفرنس میں دیگر ملزمان انجینئرقمر اسلام راجہ،وسیم اجمل سمیت دیگر عدالت میں پیش ہوئے، نیب کے پراسیکیوٹر اسداللہ ملک کے مطابق کہ صاف پانی کمپنی کے دفتر کا شہباز شریف کی بیٹی رابعہ عمران اور داماد عمران یوسف پر مارکیٹ ویلیو سے زائد کرایہ وصول کرنے کا الزام ہے،نیب ریفرنس کے مطابق شہباز شریف کی بیٹی رابعہ عمران اور داماد عمران علی سمیت دیگر پر قومی خزانے کو 2 کروڑ 47 لاکھ کا نقصان پہنچانے کا الزام ہے شہباز شریف کی بیٹی رابعہ عمران، علی اینڈ فاطمہ ڈویلپر کمپنی کی ڈائریکٹر تھیں، شہبازشریف کے داماد پر صاف پانی پراجیکٹ کیلئے بلڈنگ کرائے پر دینے کا الزام ہے، عمران علی یوسف کی کمپنی علی اینڈ فاطمہ ڈویلپر نے زیر تعمیر بلڈنگ کرائے پر دی،شہبازشریف کے داماد نے زیر تعمیر عمارت کے  غیر قانونی طور پہ کرائے وصول کئے، ریفرنس میں مرکزی ملزم وسیم اجمل بھی نامزد ہے۔

مزید :

علاقائی -