حکومت مخلص ہوتی تو مسائل اتنے  نہ بڑھتے،چودھری حبیب الحق

حکومت مخلص ہوتی تو مسائل اتنے  نہ بڑھتے،چودھری حبیب الحق

  

اوکاڑہ(نامہ نگار)انجمن آڑھتیان غلہ منڈی اوکاڑہ کے صدر چودھری حبیب الحق نے کہاہے کہ وفاقی وصوبائی حکومتیں عوام سے مخلص ہوتی اور حکمران اغیار کی غلامی پر رضامند نہ ہوتی تومسائل ومشکلات اتنے نہ ہوتے۔حکمرانوں کی صفوں میں ہی چینی پٹرول مافیازموجودہے ان مافیازکو کوئی سزانہیں دے سکتا۔مافیازمضبوط ہونے اور حکمرانوں سے مضبوط تعلقات کی وجہ سے قیمتوں میں کمی آرہی ہے نہ مہنگائی میں کمی،غریب عوام کاکوئی پرسان حال نہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

 چودھری حبیب الحق نے کہاکہ وفاقی حکومت کی جانب سے بالآخر حالیہ پٹرول بحران پر انکوائری کمیشن کی رپورٹ کو پبلک کرنے اور ذمہ داران اوگرا،پٹرولیم ڈویڑن اور تیل کمپنیوں کے شرمناک کردارسے واضح ہوگیا ہے کہ حکومت کے اداروں میں بیٹھے افراد ہی پٹرول بحران کے اصل ذمہ دار ہیں۔عوام کا خون چوسنے والوں کو عبرت کا نشان بنانا تحریک انصاف کی حکومت کی ذمہ داری ہے۔ لیکن بد قسمتی سے حکومت کسی بھی ایشو پر اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے ادا نہیں کر رہی۔یوں محسوس ہوتا ہے کہ پڑولیم،بجلی، گیس، بڑھتی ہوئی مہنگائی سمیت کسی بھی معاملے پر حکومت سنجیدہ نہیں ہے۔عوام کے لئے مسائل بڑھتے ہی جا رہے ہیں۔ پورا ملک ہی بحرانوں کی زد میں ہے۔کبھی آٹا، چینی اور پٹرول کا مصنوعی بحران جنم لیتا ہے تو کبھی اداروں کی ملی بھگت سے دیگر اشیاء خوردونوش نایاب ہوجاتی ہیں۔ عوام کے ساتھ عجیب مذاق کیا جارہا ہے۔ نا اہل حکمرانوں نے 22کروڑ عوام کو بے رحم مافیا کے حوالے کردیا ہے۔ عوام کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں ایک ہیجانی اور بحرانی کیفیت ہے۔ اربوں روپے کے قرضے بھی اخراجات پورا کرنے میں ناکام ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -