لاہور میں مثبت کیسز کی شرح 19فیصد،آکسیجن کی صورتحال تسلی بخش ہے ،ڈاکٹر  یاسمین راشد

لاہور میں مثبت کیسز کی شرح 19فیصد،آکسیجن کی صورتحال تسلی بخش ہے ،ڈاکٹر  ...
لاہور میں مثبت کیسز کی شرح 19فیصد،آکسیجن کی صورتحال تسلی بخش ہے ،ڈاکٹر  یاسمین راشد

  

لاہور ( ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ لاہور میں مثبت کیسز کی شرح 19فیصد تک پہنچ چکی ہے جبکہ پنجاب میں مثبت کیسز کی شرح 11فیصد ہے ،لاہور میں اس وقت لاک ڈان والے 15علاقے ہیں ،اوسطاً23 ہزار افراد کو یومیہ ویکسین لگائی جا رہی ہے ۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر صحت پنجاب کا کہنا تھا کہ لاہور میں آج تین ہزار 56کیسز مثبت رپورٹ ہوئے ،پرائمری ہیلتھ کیئر نے کورونا مریضوں کیلئے دو ہزار 310 بیڈز دیے ہیں ،پنجاب میں 200وینٹی لیٹر بڑھائے گئے ہیں ، آج لاہور میں 30 نئے وینٹی لیٹر لگائے جا رہے ہیں ، پبلک ہیلتھ سیکٹر میں 50وینٹی لیٹر موجود ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ چوبیس گھنٹوں میں لاہور میں کورونا سے 28اموات ہوئی ، اس وقت لاہور کے سرکاری ہسپتالوں میں 874 جبکہ نجی ہسپتالوں میں 400سے زائد کورونا کے مریض زیر علاج ہیں ، ا س وقت آکسیجن کی صورتحال تسلی بخش ہے ۔

وزیر صحت پنجاب نے کہا کہ لاہور میں اگلے دو دن میں ویکسی نیشن کیلئے سپیشل بس روٹ چلا رہے ہیں ، خصوصی بس سے ان افراد کو ویکسی نیشن کیلئے لایا جائے گا جن کے پاس سواری نہیں ہے ،مزید ویکسی نیشن سینٹر بھی بنائے جا رہے ہیں ۔ اب تک پنجاب میں نو لاکھ 34ہزار 170افراد کو ویکسین لگائی جا چکی ہے۔

ڈاکٹر یاسمین راشد نے بلاول بھٹو کی گزشتہ روز کی پریس کانفرنس پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر ( این سی او سی ) کی پہلی میٹنگ میں سب سے زیادہ شیئر سندھ کو دیا گیا تھا ،جو ویکسین انہیں دی گئی وہ ابھی تک استعمال نہیں ہوئی ، آپ کی حکومت خودمختار تھی آپ ویکسین خرید سکتے تھے ۔بھارت ویکسین فراہمی کا سب سے بڑا ملک ہے لیکن وہ شہریوں کو ویکسی نیشن نہیں کر پارہا۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -کورونا وائرس -