خاکہ تیار ہوچکا، لیکن  اگر لاک ڈاؤن لگا تو  کب لگایا جائے گا؟  ڈاکٹر فیصل سلطان نے واضح کردیا

خاکہ تیار ہوچکا، لیکن  اگر لاک ڈاؤن لگا تو  کب لگایا جائے گا؟  ڈاکٹر فیصل ...
خاکہ تیار ہوچکا، لیکن  اگر لاک ڈاؤن لگا تو  کب لگایا جائے گا؟  ڈاکٹر فیصل سلطان نے واضح کردیا

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی تیسری لہر کے پیش نظر کیا چیز بند رہے گی اور کیا کھلا رہے گا، خاکہ تیار ہوچکا ہے، اگر لاک ڈاؤن لگانا ہوا تو عید سے پہلے ہوگا۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرا م میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر  کے فیصلوں کا جائزہ چار روز بعد لیا جائے گا۔ صورتحال دیکھنے کے بعد ہی مزید سختیاں ہوسکتی ہیں، مثبت کیسز والے شہروں میں لاک ڈاان لگایا جاسکتا ہے۔ اگر ایس او پیز پر عملدرآمد نہیں ہوا تو لاک ڈاؤن لگایا جائے گا۔ کوشش ہے کہ اضافی اقدامات سے بہتری آئے۔

ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ لاک ڈاؤن کا دورانیہ کم سے کم 10 دن اور زیادہ سے زیادہ 2 ہفتے ہوسکتا ہے۔ کورونا کی پہلی 2 لہروں کے دوران کراچی میں کورونا کیسز کی شرح زیادہ تھی۔ کورونا کی موجودہ لہر کو سنجیدہ لینا چاہیے،  کورونا وائرس کی تیسری لہر بہت خطرناک ہے احتیاط کرنا ہوگا۔ عید کے قریب لوگوں کی زیادہ نقل وحمل ہوتی ہے۔ اگر لاک ڈاؤن ہوا تو عید سے پہلے ہوگا۔

ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ این اے 249 کے الیکشن سے متعلق این سی او سی کی ہدایت جاچکی ہے، لیکن ہمیں ان کا جواب نہیں آیا۔ کورونا کے پیش نظر این اے 249 کے ضمنی انتخابات ملتوی ہونے چاہیئے۔

مزید :

قومی -