مفتاح اسماعیل کی طرف سے امر بالمعروف کا ذکر، حکومت، تحریک انصاف آمنے سامنے، وزیرخزانہ کوشرم آنی چاہئے: شیریں مزاری

مفتاح اسماعیل کی طرف سے امر بالمعروف کا ذکر، حکومت، تحریک انصاف آمنے سامنے، ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے امریکہ میں آئی ایم ایف کے وفد سے ملاقات کرتے ہوئے کہا تھا عمران خان نے اپنی تحریک میں قرآنی اصطلاح ’امر بالمعروف‘ کا استعمال ایسے کیا جیسے وہ اچھائی ہیں اور ہم بْرائی ہیں۔انہوں نے کہا سیاست میں مذہب کے کارڈ کو استعمال کرنا درست نہیں،دریں اثناوفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان سے متعلق بیان میں قرآنی آیات کے حوالہ پر حکومت اور پی ٹی آئی آمنے سامنے آگئی، دونوں جانب سے ایک دوسرے پر تنقید کے نشتر برسائے گئے۔تفصیلات کے مطابق مفتاح اسماعیل نے واشنگٹن میں گفتگو کرتے ہوئے عمران خان سے متعلق بیان میں قرانی آیات کا حوالہ دیا، جس پر تحریک انصاف کی جانب سے سخت رد عمل کا اظہار کیا گیا۔پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی رہنما شیریں مزاری نے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کو آڑے ہاتھوں لے لیا اور اپنے بیان میں کہا مفتاح اسماعیل کو شرم آنی چاہیے کہ امریکہ کی خوشامد کرتے ہوئے امر بالمعروف جیسے بنیادی اسلامی تصور کا مذاق اْڑا رہے ہیں سابق وزیر مملکت برائے اطلاعا ت فر خ حبیب کا کہنا تھا کہ مفتاح اسماعیل کو کسی قرآنی آیات کا حوالہ نہیں دینا چاہیے تھا، وزیر خزانہ نے مذہب کارڈ کھیلنے کی کوشش کی، مفتاح اسماعیل کو معافی مانگنی چاہیے۔حافظ حمد اللہ نے شیریں مزاری کو جواب دیا کہ ہم عورت کیلئے اسلام کے احکامات اور عزت کی تلقین کی وجہ سے صبر کرتے ہیں، ہمیں مجبور نہ کریں، خود کو لبرل کہنے والا پی ٹی آئی کا ٹولہ مذہب کو اپنے سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کر رہا ہے، شیریں مزاری صاحبہ کو خاتم النبیین  ادا کرنے کی توفیق نہ رکھنے والے اپنے لیڈر کی بْت پرستی زیب نہیں دیتی۔انہوں نے کہا کہ عمران نیازی سیاست کا ابوجہل ہے جسے نہ سچ دکھائی دیتا ہے نہ وہ اس پر عمل کرنے کی جرات رکھتا ہے، اگر کسی سیاسی مخالف کی جان کو تشدد پر اکسانے والے بیانات کے نتیجے میں کوئی نقصان پہنچا تو عمران نیازی اور شیریں مزاری ذمہ دار ہوں گے، سیاست کی خاطر دین کی غلط تشریح بھی اسلام میں ایک جرم ہے۔اس حوالے سے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے لکھا کہ عمران خان تو سیاست کے لئے مذہب کا استعمال کر ہی رہے تھے مگر اب ان کے وزراء  بھی اس روش پر چل پڑے ہیں، بے جا مذہب استعمال کرنے کیلئے ان کو جھوٹ کا سہارا بھی لینا پڑ رہا ہے۔وفاقی وزیر برائے بحری امور فیصل سبزواری نے کہا کہ میں مفتاح اسماعیل کے ساتھ ہوں، شیریں مزاری بھی سیاست کیلئے مذہب کارڈ استعمال کر رہی ہیں، ان پڑھ لوگوں سے کیا شکوہ کریں، جہلاء یا بغیر پڑھے لکھنے والوں سے کیا شکوہ جب اعلیٰ ترین تعلیمی اداروں سے فارغ التحصیل شیریں مزاری صاحبہ سیاست کے لیے مذہب کارڈ، توہین کارڈ استعمال کریں، وہ بھی انتہائی غلط بیانی کا سہارا لیتے ہوئے۔ خدارا سیاست میں اس آگ کو نہ گھسائیں۔سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرحلیم عادل شیخ نے کہاہے کہ مفتاح اسماعیل کی ایک شرمناک وڈیو سامنے آئی ہے جس میں امر بالمعروف کا مذاق اڑایا گیا،مفتاح اسماعیل جن کے غلام ہیں جن کے بوٹ پالش کرتے ہیں انہیں بتارہے ہیں کہ عمران خان دین کے راستے پر چل رہا ہے عمران خان امربالمعروف کی بات کرتا ہے اور بتانا چاہ رہے تہ کہ عمران خان اللہ اور رسولؐ کے راستے پر چل رہا ہے یہ سب کچھ کرنے کے باوجود ان سے ورلڈ بنک کا چیف ایگزیکیوٹو، منیجنگ ڈائریکٹر تک نے ان سے ملاقات نہیں کی اور نہ کوئی ریلیف دیا۔
مذہب کارڈ

مزید :

صفحہ اول -