عدالت نے لڑکی کے اغواءاور مبینہ زیادتی مقدمے میں عدم شواہد پر ملزم شرجیل کو بری کر دیا 

عدالت نے لڑکی کے اغواءاور مبینہ زیادتی مقدمے میں عدم شواہد پر ملزم شرجیل کو ...
عدالت نے لڑکی کے اغواءاور مبینہ زیادتی مقدمے میں عدم شواہد پر ملزم شرجیل کو بری کر دیا 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سینٹرل نے لڑکی کے اغواءاور مبینہ زیادتی کے مقدمے میں عدم شواہد کی بناءپر ملزم شرجیل کو بری کردیا ہے ۔
تفصیلات کے مطابق کراچی سٹی کورٹ میں ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سینٹرل نے لڑکی کے اغواءاور مبینہ زیادتی کے مقدمے کا فیصلہ سنادیا۔ عدالت نے عدم شواہد کی بناء پر ملزم شرجیل کو بری کردیا۔ عدالت نے فیصلے میں کہا کہ ملزم کیخلاف کوئی اور کیس نہیں تو جیل سے رہا کیا جائے۔وکیل صفائی لیاقت گبول ایڈوکیٹ نے موقف اپنایا تھا کہ ملزم کیخلاف کوئی چشم دید گواہ نہیں ہے۔ مغویہ ملزم شرجیل کو پسند کرتی تھی اور خود اس کے گھر پہنچ گئی تھی۔ مغویہ کشش کو ملزم شرجیل نے اغواءنہیں کیا تھا۔
پولیس کے مطابق ملزم کے مغویہ کشش کے والد کی مدعیت میں مقدمہ ستمبر 2020 میں فیڈرل بی ایریا میں درج کیا گیا تھا۔ مدعی کی اہلیہ گھر میں سورہی تھی اور جب وہ اٹھی میری بیٹی گھر سے غائب تھی۔ مغویہ نے بیان میں کہا تھا ملزم مجھے دھمکی دے کر موٹر سائیکل پر بیٹھا کر سرجانی ٹاو¿ن لے گیا تھا۔

مزید :

قومی -