مصر میں موجود فلسطینیوں کی رہائی فلسطینی سفارتخانے کی ذمہ داری ہے، ڈاکٹر احمد بحر

مصر میں موجود فلسطینیوں کی رہائی فلسطینی سفارتخانے کی ذمہ داری ہے، ڈاکٹر ...

غزہ (این این آئی) مصرمیں ایک سال قبل جزیرہ نما سیناء میں فوج کے ہاتھوں اغواء ہونیوالے فلسطینی شہریوں کی قاہرہ کی فوجی جیل میں موجودگی کے انکشاف کے بعد مغویوں کا معاملہ ایک بار پھر میڈیا میں بڑے پیمانے پر زیربحث لایا جا رہا ہے۔ دوسری جانب فلسطینی عوامی، سماجی اور سیاسی حلقوں کی طرف سے مغوی فلسطینیوں کی فوری رہائی کے مطالبات شدت اختیار کرتے جا رہے ہیں۔اطلاعات کے مطابق فلسطینی مجلس قانون ساز کے ڈپٹی اسپیکر ڈاکٹر احمد بحر نے ایک بیان میں قاہرہ کی ایک جیل میں بند چار فلسطینیوں کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ مغویوں کی رہائی قاہرہ میں فلسطینی سفارت خانے کی ذمہ داری ہے۔میڈیا پر آنیوالی تصاویر میں فلسطینی قیدیوں کو نہایت کسمپرسی کے عالم میں دیکھا جا سکتا ہے۔ فلسطینی قیدی ایک تنگ کوٹھڑی میں بند ہیں جہاں وہ نیم عریاں حالت میں پڑے دکھائی دیتے ہیں۔

ان کے جسم اور چہروں پر یریشانی اور تشدد کی نشانات ہے۔فلسطینی ڈپٹی اسپیکر ڈاکٹر احمد بحر نے کہا ہے کہ مغوی فلسطینی شہریوں کی رہائی فلسطینی سفارتخانے کی ذمہ داری ہے۔ یہ بات حیران کن ہے کہ سال گزر جانے کے باوجود فلسطینی سفارت خانے نے مغویوں کی رہائی کے بارے میں کوئی ٹھوس قدم نہیں اٹھایا ہے۔ انہوں نے فلسطینی اتھارٹی اور قاہرہ میں فلسطینی سفارتکاروں پر زور دیا کہ وہ مغوی فلسطینیوں کی غیر مشروط اور باعزت رہائی کیلئے اپنے فرائض پورے کریں۔

مزید : عالمی منظر