بلدیاتی اداروں کے چیئرمین مخصوص نشستوں کے الیکشن ملتوی

بلدیاتی اداروں کے چیئرمین مخصوص نشستوں کے الیکشن ملتوی

ملتان(جنرل رپورٹر)بلدیاتی اداروں کی مخصوص نشستوں مےئر‘ ڈپٹی مےئر‘(بقیہ نمبر45صفحہ7پر )

چےئرمین اوروائس چےئرمین ضلع کونسل کے یکم ستمبر کو ہونے والے الیکشن ہائیکورٹ نے ملتوی کردےئے ہیں توقع کی جارہی ہے کہ عید الاضحی کے بعد نیا شیڈول جاری ہوگا جس میں سابقہ درخواستیں برقرار رہیں گی اور نئے لوگوں کو مخصوص نشستوں کے الیکشن میں حصہ لینے کا موقع ملے گا یہ بھی امکان پایا جارہا ہے کہ مخصوص نشستوں کے الیکشن متناسب نمائندگی کی بنیاد پر ہونگے جبکہ یونین کونسلوں میں مخصوص نشستوں کے الیکشن خفیہ بیلٹ کے ذریعے ہونگے اگر متناسب نمائندگی کا طریقہ رائج کیا گیا تو پھرآزاد حیثیت سے منتخب ہو کر مسلم لیگ ن میں شامل ہونے والے چےئرمین اپنی وفاداریاں تبدیل نہیں کرسکیں گے اورانہیں بھی اپنی پارٹی کو ووٹ دینا ہوگا یقیناًپورے جنوبی پنجاب میں مسلم لیگ ن کے چےئرمین ضلع کونسل اور مےئر کامیاب ہونگے اور تحریک انصاف اپوزیشن کا کردار ادا کرے گی لیکن رحیم یار خان کے ضلع میں مخدوم احمدمحمود کی کاوشوں سے چےئرمین ضلع کونسل اور میونسپل کمیٹی کے چےئرمین کا تعلق پیپلز پارٹی سے ہوگا کیونکہ وہاں ان کی اکثریت ہے مخصوص نشستوں کے الیکشن ملتوی ہونے کی وجہ سے اگرچہ تحریک انصاف کے حلقوں میں مایوسی پیدا ہوئی ہے لیکن مسلم لیگ ن کے ارکان اس بات پر خوش ہیں کہ وہ اپنے نئے ساتھیوں کے کاغذات نامزدگی جمع کراسکیں گے ملتان کیونکہ جنوبی پنجاب کا مرکز ہے اس لئے اس شہر کی اہمیت دیگر شہروں کے مقابلے میں زیادہ ہے یہاں میونسپل کارپوریشن کے مےئر اور چےئرمین ضلع کونسل کے انتخاب میں بڑے بڑے سیاستدان براہ راست ملوث ہوتے ہیں جن میں سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی‘وفاقی وزیر حاجی سکندرحیات بوسن‘ سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی‘تحریک انصاف کے مرکزی رہنما مخدوم شاہ محمود قریشی‘ ایم این اے ملک عامر ڈوگر‘مسلم لیگ ن کے ایم این اے سید جاوید علی شاہ ‘رانا قاسم نون سمیت دیگر ارکان صوبائی اسمبلی اور کئی قد آور سیاستدان پوری طرح ملوث ہیں جیسے ہی مخصوص نشستوں کے الیکشن ہونگے مےئر اور چےئرمین ضلع کونسل کے لئے جوڑ تو ڑ ہوگا تو بڑے بڑے سیاستدانوں کی پجارو گاڑیاں سڑکوں پر ہونگی لیکن لگتا یہی ہے کہ ان سب کی محنت رائیگاں جائے گی اورمےئراورچےئرمین ضلع کونسل وہی ہوگا جسے مسلم لیگ ن کی قیادت نامزد کرے گی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر