عازمین حج متوجہ ہوں!شیطان کو کنکریاں مارنے کے اوقات میں کمی کا فیصلہ ہوگیا

عازمین حج متوجہ ہوں!شیطان کو کنکریاں مارنے کے اوقات میں کمی کا فیصلہ ہوگیا
عازمین حج متوجہ ہوں!شیطان کو کنکریاں مارنے کے اوقات میں کمی کا فیصلہ ہوگیا

  


جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی حکام نے بھگدڑ کے واقعات سے بچنے کے لئے عازمین حج کے شیطان کو کنکریاں مارنے کے اوقات میں کمی کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت یہ دورانیہ بارہ گھنٹے کردیا جائے گا، عرب نیوز کے مطابق شیطان کو کنکریاں مارنے کے اوقات میں کم کا فیصلہ گزشتہ برس بھگدڑ مچنے سے سینکڑوں افراد کی اموات کے بعدکیا گیا ہے،شیطان کو کنکریاں مارنے کا عمل حسب معمول منیٰ میں 11 ستمبر کو شروع ہو کر تین دن تک جاری رہے گا تاہم اب اس کا دورانیہ بارہ گھنٹے کردیا جائے گا ۔سعودی وزارت حج کا کہنا ہے کہ رواں برس پہلے دن صبح چھ بجے سے لے کر ساڑھے دس بجے تک کنکریاں مارنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ دوسرے دن دوپہر دو بجے سے شام چھ بجے تک جبکہ تیسرے اور آخری دن صبح ساڑھے دس بجے سے لے کر دو بجے تک کنکریاں مارنے کی اجازت نہیں ہوگی۔اخبار نے سعودی وزارت حج کے حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس فیصلے پر عمل سے حاجیوں کو کنکریاں مارنے میں آسانی ہوگی اور رش کم ہونے کی وجہ سے بھگدڑ کا خطرہ بھی نہیں رہے گا۔

مزید : بین الاقوامی