یوایم ٹی کی فاٹاریفارمز کانفرنس وقت کی اہم ضرورت ہے،عائشہ غوث

یوایم ٹی کی فاٹاریفارمز کانفرنس وقت کی اہم ضرورت ہے،عائشہ غوث

  

لاہور ( ایجوکیشن رپورٹر) یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی (یو ایم ٹی ) کے میڈیا اینڈ ماس کمیونکیشن ڈیپارٹمنٹ کے تحت فاٹا ریفارمز پر گول میز کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت صوبائی وزیر خزانہ ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے کی۔ کانفرنس میں ریکٹر یو ایم ٹی ڈاکٹر محمد اسلم ، ملک احمد، منزہ حسن ، خدیجہ فاروقی، سعدیہ سہیل ،قیوم نظامی، حبیب اکرم، سجاد میر، سلمان عابد،غفا ر احمد ، اور یو ایم ٹی کے شعبہ میڈیا اینڈ ماس کمیونکیشن کے چیئرمین ڈاکٹر محمد حنان،طلبہ،اساتذہ اور میڈیا اورسول سوسائٹی سے افراد نے شرکت کی۔ ریکٹر یوایم ٹی ڈاکٹر محمد اسلم نے کہا کہ فاٹا پاکستان کا ایک ضروری حصہ ہے جس کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا لہٰذ اٰ حکومت کو چاہےئے کہ اس کی ترقی اور بہتری کے لیے موثر اقدامات کرے۔ صوبائی وزیر خزانہ ڈاکٹرعائشہ غوث پاشا نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب نے بڑے صوبے ہونے کے ناطے فاٹو کے عوام کے لیے پہلے بھی کردار ادا کیا ہے اور اب بھی کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ فاٹا پورے ملک کا ایشو ہے اور تمام صوبوں کو مل کر اس کی ترقی وخوشحالی کے لیے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔

۔انہوں نے کہا کہ سکیورٹی کے مخدوش حالات کے پیش نظر فاٹا کا فوری طور پر ضم کیے جانے میں مسائل پیش آرہے ہیں لیکن حکومت فاٹا ریفارمز میں سنجیدہ ہے۔انہوں نے کہا کہ تعلیم وصحت کی سہولیات بہم پہنچانا فاٹا کے عوام کا بنیادی حق ہے اور تعلیم کے بغیر وہاں معاشی ترقی نہیں ہوسکتی۔صوبائی وزیر نے یوایم ٹی انتظامیہ کو فاٹاریفارمز پر کانفرنس منعقد کرنے کے عمل کو سراہا اور اسے وقت کی اہم ضرورت قرار دیا۔ و دیگر مقر رین کی بڑی تعداد نے فاٹا ریفارمز کے حق میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ فاٹا ریفارمز کے حوالے سے ماضی میں بہت کوششیں کی گئی ہیں لیکن وہ کامیاب نہ ہوسکیں اب فاٹا کو ایک صوبے میں ضم کرنے کا قیمتی موقع ہاتھ آیا ہے جس کو چند مفاد پرست سیاستدانوں کی خاطر داؤ پر نہیں لگانا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ تمام صوبوں کو چاہےئے کہ قانونی پیچیدگیوں کے طریقہ کار پر عمل درآمدی کے ساتھ ساتھ فاٹا کی ترقی وخوشحالی کے لیے اپنا کردار ادا کریں تاکہ وہاں کے لوگوں کی مایوسی اور محرومیت کو دور کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا کے مخصوص سیاسی و سماجی حالات کے پیش نظر یہ اب بھی ممکن ہے کہ طور پر وہاں تعلیم اور حفظان صحت کے مراکز قائم کرکے لوگوں کو احساس کمتری سے نکالا جاسکے۔ مقررین نے مزید کہا کہ فاٹا کو درپیش چئلنجز نہ صرف خطے بلکہ پورے پاکستانی معاشرے پر اثر انداز ہو رہے ہیں اس لے ان کا سدباب بہت ضروری ہے۔ان کا مزید کہناتھا کہ فاٹا میں لائی جانے والی بڑی تبدیلیوں میں کے پی کے کے کوگوں کو اہم کردار ادا ہوگا۔ کانفرنس کے ختتام میں ریکٹر یو ایم ٹی ڈاکٹر محمد اسلم نے مہانوں کو سوینئر پیش کیے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -