وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو صحافی ارشد شریف کو آموں کا تحفہ بھجوانا مہنگا پڑ گیا ، اینکر پرسن نے ایسا کام کر دیا کہ پنجاب حکومت نے خوابوں میں بھی نہ سوچا تھا

وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو صحافی ارشد شریف کو آموں کا تحفہ بھجوانا مہنگا پڑ ...
وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو صحافی ارشد شریف کو آموں کا تحفہ بھجوانا مہنگا پڑ گیا ، اینکر پرسن نے ایسا کام کر دیا کہ پنجاب حکومت نے خوابوں میں بھی نہ سوچا تھا

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )اینکر پرسن اور صحافی ارشد شریف کو وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی طرف سے آموں کا تحفہ بھجوایا گیا جسے انہوں نے واپس کر دیا تاہم اس کے بعد انہوں نے ٹویٹر پر سوالات کی بوچھاڑ کر دی ہے اور یکم ستمبر تک ان کا درست جواب دینے والے شخص کو ایک لاکھ روپے انعام دینے کا اعلان کر دیا ۔

تفصیلات کے مطابق ارشد شریف نے آموں کی پیٹوں سے متعلق پہلا سوال کرتے ہوئے کہا کہ ” بتایا جائے کہ آم وزیراعلیٰ پنجاب کے کس فارم کے ہیں ، اس کا نام ملکیت کے دستاویزات کے ساتھ بتایاجائے ؟۔

2) اگر نہیں تو پھر آم کس نے اور کتنے میں خریدے ؟

3) اگر وزیراعلیٰ پنجاب نے اس کی قیمت اپنی جیب سے دی ہے تو خریداری سے قبل اس کیلئے بینک سے نکالے گئے پیسوں کی رسید ظاہر کریں ؟

4)اگر سوال نمبر تین کا جواب نہیں ہے تو اس صورت کیا آم کی خریداری کیلئے قیمت کسی اور نے ادا کی ،یہ بندہ کون ہے ؟

5) ان آموں کی پیکنگ اور انہیں بھجوانے کیلئے سرکاری ذرائع کیوں استعمال کیے گئے ؟آموں کو پہنچانے کیلئے کونسی گاڑیاں استعمال کی گئیں ، دروازے تک آم پہنچانے والے لوگ کون ہیں ؟ آم پہنچانے والو کو دیہاڑی کس نے اداکی اور گاڑیوں کا کرایہ کس نے دیا ؟

6) مختلف شہروں میں آم پہنچانے کی ذمہ داری کس پنجاب حکومت کے اہلکار کو دی گئی ؟

7)وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی جانب سے جن صحافیوں ، سول ملٹری بیوروکریٹس ، پاکستان کی اشرافیہ اور کیبنٹ ممبرز کو آم بھجوائے گئے ان کی فہرست مکمل کریں ۔

صحافی ارشد شریف کا کہناتھا کہ ان تمام سوالوں کا ثبوتوں اور سرکاری دستاویزات کے ساتھ یکم ستمبر تک درست جواب دینے والے امیدوار کو ایک لاکھ روپے انعام دیا جائے گا ، درست جواب دینے والوں کی تعداد ایک سے زائد ہونے پر ایک لاکھ روپے کا انعام ہی ان میں برابر تقسیم کیا جائے گا ۔

انہوں نے کہا کہ کہ اگر کوئی گمنا م رہنا چاہتا ہے تو وہ دستاویزات مجھے powerplaypakistan@gmail.com پر ای میل کر سکتا ہے ، ان سوالات کے جوابات وزیراعلیٰ پنجاب کے سٹاف اور پنجاب حکومت بھی دے سکتی ہے پنجاب حکومت سرکاری سطح پر اس کے درست جوابات دے میں انعامی رقم ان کی مرضی کے مطابق چیریٹی کر دوں گا ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...